27

آئی فلو کے کیسوں میں بتدریج اضافہ

جموں کشمیر میں اب تک 26ہزار معاملات درج
سرینگر/30اگست
جموں کشمیر میں چشم آشوپ کے معاملات میں اضافہ ہورہا ہے اور اب تک 26ہزار سے زائد ائی فلو کے کیس ہسپتالوں میں درج کئے جاچکے ہیں ۔ ادھر ذرائع سے معلوم ہوا ہے کہ چشم آشوب تیزی سے پھیل رہا ہے ۔وادی میں اس مریض میں لگاتار اضافہ ہورہا ہے جبکہ جموں میں تعداد گھٹ رہی ہے ۔ ادھر صوبہ کشمیر کے سرینگر ضلع میں سب سے زیادہ کیس سامنے آئے ہیں جبکہ ضلع بڈگام میں سب سے کم معاملات رپورٹ ہوئے ہیں۔ سی این آئی کے مطابق جموں و کشمیر بھر کے اسپتالوں میں ’آنکھوں کے فلو‘ کے معاملات میں اضافہ دیکھا جا ر ہے، جس میں مریض اپنی آنکھوں میں جلن، لالی، سوجن اور خارش جیسی علامات کے ساتھ مریض ہسپتال پہنچ رہے ہیں ۔ کشمیر اور جموں دونوں ڈویژنوں کے ڈاکٹروں نے بتایا ہے کہ آشوب چشم کے کیسز، جسے عام طور پر ’آئی فلو‘ کہا جاتا ہے، کشمیر ڈویژن میں بڑھتے جا رہے ہیں، جب کہ جموںصوبے میں ان میں کمی ہو رہی ہے۔ ادھر متعلقہ ڈاکٹروں نے بتایا ہے کہ ایک دو ہفتوں میں اس بیماری پر مکمل طورپر قابوپایا جائے گا۔ دریں اثنا ءڈائریکٹوریٹ آف ہیلتھ سروسز جموں کے ایک ذمہ دار نے بتایا کہ جموں صوبہ بشمول جی ایم سی جموں میں آشوب چشم کے 14412کیس رپورٹ ہوئے ہیں۔ مزید تفصیلات فراہم کرتے ہوئے انہوں نے بتایا کہ اب تک جموں ضلع میں 3274، ڈوڈہ میں 789، کٹھوعہ میں 1956، کشتواڑ میں 604، پونچھ میں 946، راجوری میں 1066، رام بن میں 975، ریاسی میں 401، 1471 ،سامبا، ادھم پور میں 849، اور جی ایم سی جموں میں 1,631کیس رپورٹ ہوئے ہیں۔ ادھر ہیلتھ سروسز کشمیر کے ڈائریکٹر ڈاکٹر میر مشتاق نے بتایا کہ کشمیر کے ہسپتالوں میں ’آئی فلو‘ کے 11,751 کیسز رپورٹ ہوئے ہیں۔ انہوں نے مزید بتایا کہ ضلع کولگام میں 622، کپواڑہ میں 703، پلوامہ میں 1719، شوپیاں میں 938، سری نگر میں 1،363، اننت ناگ میں 1،876، بانڈی پورہ میں 1،042، بارہمولہ میں 1،697،بڈگام میں 74معاملے رپورٹ ہوئے ہیں۔حکام نے بتایاکہ جموں ڈویژن میں 21 اگست سے اب تک تقریباً دو ہزار کیسز رپورٹ ہوئے ہیںاورآج 132 کیس رپورٹ ہوئے ہیں۔ پچھلے ہفتے روزانہ تقریباً 400 کیسز رپورٹ ہوئے

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں