0

اندو شانگس،دیوسر اور پہلگام میں بندروں اور ریچھوں کا راج قائم

گھروں میں گھس کر پہنچارہے ہیں نقصان، لوگ ہجرت کرنے پر مجبور
سرینگر/27اکتوبر/وی او آئی//جنوبی کشمیر کے ضلع اننت ناگ اور کولگام کے اندو شانگس،دیوسر پہلگام علاقے میں بندروں اور ریچھوں نے لوگوں کا جینا حرام کردیا ہے جبکہ بندر گھروں میں گھس کر سامان کو تہس نہس کرتے ہیں۔ وئس آف انڈیا کے نمائندے امان ملک کے مطابق جنوبی کشمیر کے اندو شانگس، دیوسر اور پہلگام علاقے میں بندروں اور ریچھوں نے لوگوں کی نیندیں حرام کرکے رکھ دیں ہیں۔ ضلع اننت ناگ کے اندو شانگس اور پہلگام میں بندروں کی تعداد اس قدر بڑھ گئی ہے کہ لوگ ہجرت کرنے پر مجبور ہوگئے ہیں۔ لوگوں نے سی این آئی نمائندے امان ملک کو بتایا کہ محکمہ وائلڈ لائف کا کہیں اتہ پتہ نہیں ہے اور نا ہی وہ ان بے لگام بندروں کو قابل میں کرنے کیلئے کوئی اقدام اْٹھارہے ہیں۔ بتایا جاتا ہے کہ بندروں کی تعداد اس قدر بڑھ گئی ہے کہ وہ لوگوں کے گھروں میں گھس کر وہاں موجود سامان کو تہس نہس کرکے جو چیز پسند آئے اس کو اپنے ساتھ اْٹھاکے لے جاتے ہیں۔ مقامی لوگوں کے مطابق بندرو ں اور دیگر جنگلی جانوروں کی ہڑبونگ کی وجہ سے لوگ اب ہجرت کرنے پر مجبور ہوگئے ہیں۔ لوگوں نے کہا کہ وہ گھروں میں پہرہ دینے سے بھی کتراتے ہیں کیوں کہ ایک یا دو اشخاص کا گھر میں پہرہ دینا کسی خطرے سے خالی نہیں اور اس سے جان کاخطرہ بھی بڑھ جاتا ہے اور اکثر گاؤں والے آٹھ دس افراد پر مشتمل ٹولیوں میں ٹین بجابجاکر بندروں کو گھروں اور دکانوں سے دور رکھتے ہیں۔لوگوں نے محکمہ وائلڈ لائف کے اعلیٰ افسران سے اپیل کی ہے کہ وہ اس معاملے کی سنگینی کو سمجھ کر بندروں اور ریچھوں کو قابل کرنے کیلئے اقدامات اْٹھائیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں