0

این آئی ٹی سری نگر نے مسلسل تیسرے سال سالانہ شفافیت آڈٹ ریٹنگ میں 99 فیصد اسکور کیا

سرینگر۔۔نیشنل انسٹی ٹیوٹ آف ٹیکنالوجی (این آئی ٹی( سری نگر نے مسلسل تیسرے سال ’ٹرانسپیرنسی آڈٹ رپورٹ ریٹنگز 2022-23‘ میں 99.31 فیصد اسکور کیا ہے۔ یہ آڈٹ نیشنل انسٹی ٹیوٹ آف ٹیکنیکل ٹیچرز ٹریننگ اینڈ ریسرچ ،چندی گڑھ نے کیا تھا۔سینٹرل انفارمیشن کمیشن (سی آئی سی) نئی دہلی نے این آئی ٹی ٹی ٹی آر چندی گڑھ کو تشخیص کے لیے بیرونی آڈیٹنگ ایجنسی کے طور پر نامزد کیا تھا۔ ایجنسی نے مختلف پیرامیٹرز میں این آئی ٹی سری نگر کی کارکردگی کا جائزہ لیا۔کل 875 نمبروں میں سے، این آئی ٹی سری نگر نے متاثر کن 869 نمبر حاصل کیے، جو مسلسل تیسرے سال آڈٹ کے تمام مقررہ معیارات پر شاندار 99.31 فیصد اسکور کا ترجمہ کرتا ہے۔ڈاکٹر سنیل دت، ایک ممتاز پروفیسر اور سابق سربراہ محکمہ تعلیم اور تعلیمی انتظام، جو نوڈل آفیسر کم سنٹرل پبلک انفارمیشن آفیسر کے طور پر بھی خدمات انجام دیتے ہیں، نے آڈٹ کے عمل کی نگرانی میں اہم کردار ادا کیا۔مزید برآں، محمد اقبال ڈار، اسسٹنٹ رجسٹرار (ایڈمن( نے این آئی ٹی سری نگر کی جانب سے شفاف آڈٹ مشق کے کوآرڈینیٹر کے طور پر خدمات انجام دیں۔ڈائریکٹر این آئی ٹی سری نگر، پروفیسر (ڈاکٹر) سدھاکر یدلا نے پوری این آئی ٹی کمیونٹی کو ان کی شاندار کامیابی کے لیے دلی مبارکباد پیش کی، جس سے ادارے کی انتظامیہ کو بہت فخر ہوا ہے۔انہوں نے شفافیت کے لیے ادارے کے غیر متزلزل عزم کا اعادہ کرتے ہوئے اس بات پر زور دیا کہ اس سلسلے میں کوئی سمجھوتہ نہیں کیا جائے گا۔ڈائریکٹر نے اسسٹنٹ کا خصوصی تذکرہ کرتے ہوئے عملہ اور انتظامیہ کی کاوشوں کو سراہا۔ رجسٹرار لیگل، محمد حاذک، جنہوں نے ایک موثر اور مضبوط آر ٹی آئی ازالے کا نظام تیار کیا تھا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں