0

بھارتی آٹوموبائل انڈسٹری میں 1 ٹریلین امریکی ڈالر کی برآمدی صنعت بننے کے صلاحیت ۔رپور ٹ

نئی دلی۔ 4؍ اکتوبر۔ ایم این این۔ ایک رپورٹ کے مطابق، ہندوستانی آٹوموبائل سیکٹر میں 2035 تک 1 ٹریلین امریکی ڈالر کی برآمدی صنعت بننے کی صلاحیت ہے۔آرتھر ڈی لٹل کی ایک رپورٹ کے مطابق صنعت مینوفیکچرنگ، اختراعات اور ٹیکنالوجی کی قیادت کے ذریعے قابل عمل سائز حاصل کر سکتی ہے۔آرتھر ڈی لٹل مینیجنگ پارٹنر (انڈیا اور جنوبی ایشیا) برنک چترن میترا نے نوٹ کیا کہ ہندوستان کی آٹو موٹیو انڈسٹری بین الاقوامی منڈیوں کو اپیل کرتے ہوئے ڈیزائن، ترقی اور پیداوار کا عالمی مرکز بن سکتی ہے۔اس کو حاصل کرنے کے لیے، پوری صنعت کے کھلاڑیوں کو قابل اعتماد اور مسابقتی عالمی مینوفیکچرنگ کے لیے اپنی صلاحیتوں کو اپ گریڈ کرنا چاہیے۔” آٹو موٹیو سافٹ ویئر اور انجینئرنگ ریسرچ اینڈ ڈیولپمنٹ میں ہندوستان کی طاقت زونل آرکیٹیکچر اور ایڈوانسڈ ڈرائیور اسسٹنس سسٹم جیسے ابھرتے ہوئے رجحانات کے ساتھ ہم آہنگ حل پیش کرکے ترقی کر سکتی ہے۔ میترا نے کہا کہ ہندوستان میں آٹو موٹیو جدت طرازی کا رہنما بننے کی صلاحیت ہے ۔یہ مقامی آٹوموٹیو ماحولیاتی نظام کے اندر اختراع کی بڑھتی ہوئی رفتار اور خلل کی بدلتی حرکیات کو نمایاں کرتا ہے، جس کا مؤثر طریقے سے استعمال کیا جائے تو، ہندوستان کو عالمی آٹوموٹیو قیادت کی پوزیشن میں لے جا سکتا ہے۔عالمی آٹوموٹیو آر اینڈ ڈی اور سافٹ ویئر مارکیٹ میں 2030 تک تین گنا بڑھ کر 400 بلین امریکی ڈالر ہونے کی امید ہے اور ہندوستان اس طرح کی سرگرمیوں کے لیے دنیا کے سافٹ وئیر ہب اور آف شور منزل کے طور پر اپنی پوزیشن کا فائدہ اٹھا سکتا ہے۔’ ‘ہندوستان کے آٹوموٹیو سیکٹر کی حقیقی صلاحیت کو کھولنے کے لیے حکومت سمیت تمام اسٹیک ہولڈرز کے درمیان مضبوط مکالمے اور ٹھوس اقدامات کی ضرورت ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں