0

جموں اور کشمیر پولیس نے جموں میں دہشت گردی کی مالی معاونت سے غیر منافع بخش تنظیموں کے غلط استعمال سے نمٹنے کے لیے پروگرام منعقد کیا

جموں، 20 اکتوبر ۔ ایم این این۔ سری نگر میں دوسرے دن کئے گئے اقدامات کی طرز پر، دہشت گردی کی مالی معاونت سے کمزور غیر منافع بخش تنظیموں (این پی اوز) کے ممکنہ غلط استعمال سے نمٹنے سے متعلق اسی طرح کا ایک پروگرام آج ڈسٹرکٹ پولیس لائنز جموں میں منعقد ہوا۔یہ پروگرام مشترکہ طور پر جموں و کشمیر پولیس کے سی آئی ڈی ونگ نے وزارت داخلہ (ایم ایچ اے)، حکومت ہند کے ساتھ صوبہ جموں کے تمام این پی اوز کے لیے منعقد کیا تھا۔جموں صوبے میں مقیم مختلف این پی اوز کے 110 سے زیادہ عہدیداران بشمول راجوری، پونچھ، ڈوڈا، کشتواڑ اور رامبن کے دور دراز علاقوں کے کارکنان نے اس پروگرام میں حصہ لیا جس کا مقصد ایسے کارکنان کو ملک دشمن عناصر کی ممکنہ کوششوں کے خلاف حساس بنانا تھا۔ اس خصوصی مشق کو مکمل کرنے کے لیے وزارت داخلہ حکومت ہند کے افسران اور ڈومین ماہرین کی ایک خصوصی ٹیم پہلے ہی جموں و کشمیر میں کیمپ لگا رہی ہے۔اپنے ابتدائی کلمات میں، فاروق قیصر، ایس ایس پی، نے شرکاء کے ساتھ ساتھ وزار ت داخلہ ٹیم کا خیرمقدم کیا اور پروگرام میں شرکت کے لیے اپنا قیمتی وقت نکالنے پر ان کا شکریہ ادا کیا جو کہ یقیناً ان سب کے لیے فائدہ مند ثابت ہوگا۔شرکاء کے ساتھ اپنی بات چیت کے دوران، اوم پرکاش سنگھ، جے ڈی ڈی، ایم ایچ اے نے کہا کہ جہاں لاکھوں این پی اوز ملک کے طول و عرض میں مختلف شعبوں میں قابل ستائش کام میں مصروف ہیں، تاہم ان میں سے کچھ دانستہ یا نادانستہ اس میں ملوث پائے گئے ہیں۔ دہشت گردی کی مالی اعانت میں جو نہ صرف ان کے جائز مقصد کے لیے بدنامی لاتی ہے بلکہ سیکیورٹی کے لیے خطرہ کا کام بھی کرتی ہے۔اس موضوع پر پاور پوائنٹ پریزنٹیشنز دی گئیں اور شرکاء کی بہتر تفہیم کے لیے کیس اسٹڈیز پر بھی تبادلہ خیال کیا گیا۔ شرکاء نے اپنے تحفظات اور خدشات بھی پیش کیے جن کا وزارت داخلہ کے حکام نے نوٹس لیا۔ مزید برآں، این پی اوز سے متعلق ٹیکس کے قوانین پر ایک پریزنٹیشن بھی انکم ٹیکس آفیسر وکاس شرما نے دی تھی۔نتیش کمار، آئی جی پی سی آئی ڈی جے اینڈ کے نے کہا کہ کشمیر اور جموں دونوں صوبوں میں بڑی تعداد میں این پی اوز کو دیکھ کر خوشی ہوئی ہے، جنہوں نے بیداری پروگرام میں سرگرمی سے حصہ لیا۔ یہاں یہ بات قابل ذکر ہے کہ اس طرح کے پروگرام ماضی میں بھی جموں و کشمیر حکومت کی جانب سے منعقد کیے جاتے رہے ہیں، تاہم یہ پہلی بار ہے کہ وہ ایم ایچ اے، جی او آئی کے ساتھ مشترکہ طور پر منعقد کیے جا رہے ہیں۔آر آر سوین، اسپیشل ڈی جی سی آئی ڈی جے اینڈ کے نے کہا کہ ایسے پروگرام مستقبل میں بھی منعقد کیے جائیں گے اور یہ ہماری کثیر جہتی حکمت عملی کا حصہ ہوں گے تاکہ جموں و کشمیر میں سرگرم مختلف دہشت گرد تنظیموں کا مالی طور پر گلا گھونٹ سکیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں