0

جموں سرینگر شاہراہ پر بدترین ٹریفک جام،سینکڑوں مال مسافر بردار نجی گاڑیاں درماندہ

ٹریفک قوانین کی کھلم کھلا خلاف ورزی ہورہی ہے اور ٹریفک عملہ خاموش تماشائی مسافروں کاالزام
سرینگر/24/اکتوبر/اے پی آئی جموں سرینگر شاہراہ پر بدترین ٹریفک جام سینکڑوں ما ل مسافرگاڑیاں درماندہ مسافرڈرائیو رکنڈیکٹر پریشانیوں سے دو چار،ٹریفک محکمہ کے خلاف لوگوں میں غم وغصہ۔اے پی آئی نیوز کے مطابق24گھنٹے جموں سرینگر شاہراہ مرمت کے لئے بند رہنے کے بعد جب گاڑیوں کی آمدرفت کے لئے کھول دی گئی تو شاہراہ پر جگہ جگہ ٹریفک جام ہونے کے نتیجے میں ڈرایؤروں کنڈیکٹروں مسافروں کو پریشانیوں سے دو چار ہونا پڑ رہاہے۔مسافروں کے مطابق آور ٹیکننگ کے باعث جموں سرینگر شاہراہ پراکثرو بیشتر ٹریفک جام ہورہاہے۔لوگوں کے مطابق جب شاہراہ کومرمت کے لئے 24گھنے بندکیاتھاتوپہلے درماندہ گاڑیوں کومنزلوں کی طرف جانے کی اجازت دی جانی چاہئے تھی تاہم ٹریفک محکمہ نے درماندہ گاڑیوں کے ساتھ سا تھ ہلکی گاڑیوں کوبھی شاہراہ پرآ نے جانے کی اجازت دی۔اور ٹریفک محکمہ کے اس کارروائی سے شاہراہ پرٹریفک جام ہوا، جبکہ اسکے ساتھ ہی مال مسافرگاڑیوں کونقل حرکت کی اجازت دی رہی نے رہی سہی کسرپوری کردی۔شاہراہ پرسفرکرنے والوں کے مطابق ٹریفک محکمہ اپنی غلطیوں لاپرواہوں غیرسنجیدگی پرپردہ ڈالنے کی کوشش کررہاہے۔اثررسوخ رکھنے والوں کوٹریفک قوانین کی کھلم کھلا خلاف ورزی کی اجازت مل رہی ہے اورٹریفک محکمہ کے جوان عام گاڑیوں کوشاہراہ پرروک دیتے ہے اس کو منظرنظر افرادکو اپنی گاڑیاں آگے لے جانے کی اجازت دیتے ہے اورمخالف سمت سے بھی یہ صورتحال ہے دونوں طرف سے قوانین کی خلاف ورزی ہورہی ہے اور اسکی سزاان مسافروں کوبگھنتے پرمجبور ہونا پڑتاہے جومسافربردار گاڑیوں میں روانہ ہوئے ہیں۔مسافروں کے مطابق روڈ ویئز اتھارٹی کی جانب سے بھی قوائد وضوابط کوپاوں تلے رندھاجارہاہے شاہراہ کو چارلائنوں میں تبدیل کرنے کے ملبہ دائیں بائیں جمع کیاجاتاہے جسے سڑک تنگ ہوکر گاڑیوں کی آمدرفت کے لئے ناممکن بن جاتی ہے اسے بی ٹریفک جام ہورہاہے تاہم مسافروں ڈرائیو رکنڈیکٹروں کامانناہے کہ ٹریفک محکمہ اپنی ڈیوٹی کو انجام دینے کے دوران ٹریفک قوانین کی خلاف ورزی کی کھلی چھوٹ دے رہاہے جسکی وجہ سے شاہراہ پرٹریفک جام ہورہاہے اور اس سے مشکلات میں مزیداضافہ ہورہاہے

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں