0

جموں و کشمیر میں دہشت گردی اورعلیحدگی پسندی خلاف جنگ اپنے آخری مرحلے میں ہے: وزیراعظم نریندر مودی

باقی ماندہ نیٹ ورک کو تباہ کرنے کےلئے کثیر الجہتی حکمت عملی پرعمل پیرا
10سال مکمل، 20 اور باقی ہیں، INDIA بلاک کو کھلا چیلنج ،مسلسل تیسری میعاد کیلئےNDA کی جیت بے مثال
سری نگر:۳، جولائی : وزیر اعظم نریندر مودی نے بدھ کے روز زور دے کر کہا کہ جموں و کشمیر میں دہشت گردی کے خلاف جنگ اپنے آخری مرحلے میں ہے، اور دہشت گردی کے باقی ماندہ نیٹ ورک کو تباہ کرنے کےلئے کثیر الجہتی حکمت عملی اپنائی گئی ہے۔جے کے این ایس مانٹرینگ ڈیسک کے مطابق راجیہ سبھا میں صدرجمہوریہ کے خطاب پر شکریہ کی تحریک کا جواب دیتے ہوئے، وزیر اعظم نریندر مودی نے زور دے کر کہا کہ گزشتہ10 سالوں میں جموں وکشمیر میں دہشت گردی کے واقعات میں کمی آئی ہے۔انہوں نے کہا کہ دہشت گردی اور علیحدگی پسندی ختم ہو رہی ہے اور جموں و کشمیر کے شہری اس لڑائی کی قیادت کر رہے ہیں۔نریندر مودی کا کہناتھاکہ جموں و کشمیر میں دہشت گردی کے خلاف ہماری لڑائی ایک طرح سے آخری مرحلے میں ہے۔ انہوںنے کہاکہ ہم وہاں دہشت گردی کے باقی ماندہ نیٹ ورک کو ختم کرنے کے لیے کثیر الجہتی حکمت عملی کے ساتھ آگے بڑھ رہے ہیں۔صدر جمہوریہ کے خطاب پر شکریہ کی تحریک کا جواب دیتے ہوئے وزیراعظم نے کہا کہ گزشتہ کئی دہائیوں کے دوران بند، ہڑتالیں، دہشت گردی کی دھمکیاں اور بم دھماکوں کی کوششیں جمہوریت پر سیاہ سایہ کی طرح رہی ہیں۔انہوںنے مزید کہاکہ اس بار لوگوں نے آئین پر اٹل یقین کےساتھ اپنی قسمت کا فیصلہ کیا ہے۔وزیراعظم نریندر مودی کہاکہ میں خاص طور پر جموں و کشمیر کے ووٹروں کو مبارکباد دیتا ہوں۔انہوں نے یہ بھی نوٹ کیا کہ سیاحتی سرگرمیاں بڑھ رہی ہیں اور نئے ریکارڈ بنا رہی ہیں اور سرمایہ کاری بھی بڑھ رہی ہے۔وزیراعظم مودی نے اس بات پر روشنی ڈالی کہ جموں و کشمیر میں حالیہ لوک سبھا انتخابات میں ووٹنگ کے اعداد و شمار گزشتہ چار دہائیوں کے ریکارڈ کو توڑنے والے ہیں۔انہوںنے کہاکہ جموں وکشمیرکے لوگ ہندوستان کے آئین، ہندوستان کی جمہوریت، ہندوستان کے الیکشن کمیشن کو قبول کرتے ہیں۔ یہ ایک بہت بڑی کامیابی ہے۔وزیر اعظم نریندر مودی نے بدھ کو راجیہ سبھا میں صدرجمہوریہ کے خطاب پر شکریہ کی تحریک کا جواب دیتے ہوئے، تیسری میعاد میں ملک کو نئی بلندیوں پر لے جانے کے لئے اپنی حکومت کے عزم اوریقین کو دہرایا، ساتھ ہی ساتھ یہ کانگریس کی قیادت والی اپوزیشن پرطنز کیا ۔ وزیر اعظم نریندر مودی نے مسلسل تیسری میعاد کے لئے این ڈی اے کی انتخابی جیت کو بے مثال قرار دیتے ہوئے نے کہا کہ2024 کے نتائج نے کچھ حیران اور پریشان کر دیا جبکہ کانگریس کی قیادت والی اپوزیشن نے جان بوجھ کر ایک تہمت آمیز مہم چلانے کی کوشش کی۔انہوںنے کہاکہ تاہم، پچھلے کچھ دنوں میں، کچھ مشتعل دھڑوں نے 60 سال بعد تاریخ کو دہرانے کا احساس کرنا شروع کر دیا ہے۔کانگریس کے زیرقیادت ہندوستانی بلاک پر اپنے حملے کو تیز کرتے ہوئے، وزیر اعظم نریندر مودی نے ایک تہائی سرکار کے مو ¿خر الذکر نعروں پر بھی طنز کیا اور کہا کہ لوگوں نے بجا طور پر مینڈیٹ دیا ہے۔نریندر مودی نے بی جے پی زیرقیادت این ڈی اے کو زبردست مینڈیٹ دینے کے لئے بھی ہم وطنوں کی ستائش کی اور کہا کہ لوگوں نے فلاح و بہبود کو ترجیح دی ہے اور کانگریس پارٹی کے تقسیم کے ایجنڈے کو شکست دی ہے۔اپوزیشن بنچوں کے زبردست ہنگامے کے درمیان وزیر اعظم نریندر مودی نے کہا کہ ملک کے لوگوں نے پروپیگنڈے پر ترقی کا انتخاب کیا ہے، اورعوام نے کام کرنے والی پارٹی پر اعتماد کیا ہے اور جعلی ایجنڈے پر پروان چڑھنے والی پارٹی کو مسترد کر دیا ہے۔ وزیر اعظم نریندر مودی نے کہا کہ پارلیمانی جمہوریت کے طویل سفر میں این ڈی اے حکومت کو تیسری مدت کے لیے عوام کی خدمت کا موقع ملا ہے اور حکمراں حکومت ترقی یافتہ بھارت اور خودانحصار بھر بھارت کے خواب کو شرمندہ تعبیر کرنے کے لیے اپنی تمام تر طاقت اور صلاحیت کو بروئے کار لائے گی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں