0

جموں و کشمیر کو قومی تعلیمی پالیسی کو مکمل طور پر نافذ کرنے اور دیگر علاقوں پر سبقت حاصل کرنے پر مبارکباد ;223; صدر ہند دروپدی مرمو

سرینگر;11اکتوبر;ایس این این;نوجوان امن، خوشحالی، نظم و ضبط کی پیروی کریں گے تو قوم مزید ترقی کرے گی کا اعلان کرتے ہوئے صدر جمہوریہ دروپدی مرمو نے جموں و کشمیر کو قومی تعلیمی پالیسی کو مکمل طور پر نافذ کرنے اور دیگر ریاستوں اور مرکز کے زیر انتظام علاقوں پر سبقت حاصل کرنے پر مبارکباد دی ۔ انہوں نے ماحولیات کے تحفظ پر زور دیتے ہوئے کہا کہ کشمیر کو قدرتی تحفے سے نوازا گیا ۔ فطرت کی حفاظت ہماری ذمہ داری ہے اور یہیں پر نوجوانوں کو اپنا کردار ادا کرنا ہوگا ۔ ہمالیان گلیشیئرس کی حفاظت کیلئے ہم پوری کوشش کر رہی ہے اور مجھے معلوم ہوا ہے کہ کئی محاذوں پر تحقیق کا سلسلہ جاری ہے ۔ سٹار نیوز نیٹ ورک کے مطابق صدر جمہوریہ ہند دروپدی مرمو دو روزہ دورے جموں کشمیر پر پہنچ گئی ۔ جس دوران انہوں نے پہلے روز کشمیر یونیورسٹی کے 40ویں کانوکیشن میں شرکت کی ۔ اس موقعہ پر انہوں نے کشمیر یونیورسٹی کے طلباء کو اسناد اور اعزازت سے نوازا ۔ تقریب میں شرکت کے دوران اپنے خطاب میں صدر ہند دروپدی مرمو نے کہا کہ جب نوجوان امن، خوشحالی اور نظم و ضبط کے راستے پر چلیں گے تو قوم خود بخود خوشحال اور ترقی کرے گی ۔ انہوں نے کہا ’’قوم اس وقت مزید ترقی کرےگی جب زیادہ سے زیادہ نوجوان امن اور چین کی پیروی کریں گے‘‘ ۔ انہوں نے کہا ’’جب نوجوان نظم و ضبط کی پیروی کریں گے تو قوم ترقی کرے گی‘‘ ۔ صدر مرمو نے اپنی تقریر کا آغاز ’’یہ چھ موج کشیر‘‘ سے کیا اور زبردست تالیاں بجائیں ۔ انہوں نے کہا ’’ میں یہاں آ کر خوش ہوں ۔ میں مختلف کانووکیشنز اور ملک کے مختلف اداروں اور یونیورسٹیوں میں گیا ہوں لیکن میں نوجوانوں کو بتاتا ہوں کہ یہ کیمپس دوسروں سے زیادہ خوبصورت ہے‘‘ ۔ کشمیر یونیورسٹی کو ماضی میں بھی حضرت بل کا فیض حاصل رہا ہے اور رہے گا ۔ اس نے کہا کہ وہ سال 2023 میں یوم جمہوریہ کی پریڈ میں حصہ لینے اور اس کی سماجی خدمات کیلئے نئی دہلی کے راشٹرپتی بھون میں ایک مقامی لڑکے کفایت اللہ کو وارڈ کرنے پر خوش ہیں ‘‘ ۔ میں کشمیر یونیورسٹی کے طلباء کو اعلیٰ تعلیم حاصل کرنے کے ساتھ ساتھ سماجی خدمات میں بھی حصہ لیتے ہوئے دیکھنا چاہوں گا تاکہ معاشرے میں تبدیلی آئے ۔ ‘‘ 462 طالب علموں میں سے 21 ٹاپرز میں گولڈ میڈل تقسیم کرنے کے بعد انہوں نے کہا ’’مجھے یہ دیکھ کر خوشی ہوئی کہ ٹاپ کرنے والوں میں 55 فیصد لڑکیاں تھیں ۔ ہماری لڑکیاں اور خواتین ہر میدان میں اپنی صلاحیتوں کا لوہا منوا رہی ہیں ۔ آج کے ایوارڈ یافتہ ہمارے تسویر اور تقدیر ہیں ۔ ‘‘ماحولیات کے تحفظ پر زور دیتے ہوئے انہوں نے کہا کہ کشمیر کو قدرتی تحفے سے نوازا گیا ۔ انہوں نے کہا ’’آن پوشہ تیلی وان پوشہ ‘‘فطرت کی حفاظت ہماری ذمہ داری ہے اور یہیں پر نوجوانوں کو اپنا کردار ادا کرنا ہوگا ۔ انہوں نے کہا ’’ہمالیان گلیشیئرز کی حفاظت کیلئے اپنی پوری کوشش کر رہی ہے اور مجھے معلوم ہوا ہے کہ کئی محاذوں پر تحقیق کا سلسلہ جاری ہے‘‘ ۔ صدر نے جموں و کشمیر کو قومی تعلیمی پالیسی کو مکمل طور پر نافذ کرنے اور دیگر ریاستوں اور مرکز کے زیر انتظام علاقوں پر سبقت حاصل کرنے پر مبارکباد دی ۔ انہوں نے تمام ایوارڈ حاصل کرنے والوں کے بہتر مستقبل کی خواہش کی ۔ یہاں یہ بات قابل ذکر ہے کہ بدھ کی صبح صدر ہند مرمو کشمیر پہنچیں اور ہوائی اڈے پر لیفٹنٹ گورنر منوج سنہا نے ان کا استقبال کیا جہاں انہیں گارڈ آف آنر دیا گیا ۔ ہوائی اڈے سے، وہ جنگی یادگار پر مہلوک فوجیوں کو خراج عقیدت پیش کرنے کیلئے سرینگر میں فوج کے 15 کور ہیڈکوارٹر تک پہنچی ۔ وہ ایک رات سری نگر میں قیام کریں گی اور دن میں وہ مقامی قبائلی گروپوں اور خواتین کے سیلف ہیلپ گروپس کے ساتھ بات چیت کریں گی ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں