0

جموں کشمیر زرعی انڈسٹری میں واجبات کی عدم ادائیگی

کشمیر ٹریڈ الاینس نے کیافوری واگزار کرنے کا مطالبہ
سری نگر:۹۱، ستمبر: جے کے این ایس : کشمیر ٹریڈرز الائنس نے حکام سے اپیل کی ہے، کہ جموں و کشمیر ایگرو انڈسٹریز واجب الادا ادائیگیوں کو فوری طور پر واگزار کرے۔جے کے این ایس کے مطابق ایک بیان میں کے ٹی اے کے صدر، اعجاز احمد شاہدار نے سپلائروں اور ٹھیکیداروں کی حالت زار کے بارے میں بات کرتے ہوئے کہاکہ ہمارے ممبران کو جموں کشمیر ایگرو انڈسٹریز سے ادائیگیوں کی وصولی میں طویل تاخیر کی وجہ سے بہت زیادہ مالی دباو ¿ کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔ اور اس سے نہ صرف ان کے کاروباری کام متاثر ہوئے ہیں بلکہ ان کی روزی روٹی بھی خطرے میں پڑ گئی ہے۔ شاہدار نے کہا کہ وہ حکام سے درخواست کرتے ہیں کہ وہ مداخلت کریں اور ان ادائیگیوں کی فوری واگزاری کو یقینی بنائیں۔ان کا کہنا تھاکہ جیسے جیسے حالات بدلتے جارہے ہیں، کشمیر ٹریڈرز الائنس اپنے اراکین کی مالی بہبود کو محفوظ بنانے اور مقامی معیشت کی ترقی میں مدد کے لیے اپنے مشن میں پرعزم ہے جبکہ انہیں امید ہے کہ حکومت ان کے خدشات کو دور کرنے کے لیے تیزی سے کام کرے گی اور جموں کشمیر ایگرو انڈسٹریز سے طویل عرصے سے واجب الادا ادائیگیوں کے اجراءمیں سہولت فراہم کریں گی۔کشمیر ٹریڈ الاینس نے ادائیگیوں میں تاخیر کی وجہ سے اپنے اراکین کو درپیش مالی مشکلات پر بڑھتی ہوئی تشویش کا اظہار کیا ہے۔شاہدار نے جموں و کشمیر میں مقامی کاروباری ماحولیاتی نظام کی حمایت کی اہمیت پر زور دیا، جو خطے کی اقتصادی ترقی اور استحکام میں اہم کردار ادا کرتا ہے۔انہوں نے کہاکہ تاخیر سے ادائیگیوں سے نہ صرف مالی پریشانی کا باعث بنی ہے بلکہ مقامی کاروباروں کو سپورٹ کرنے کے حکومت کے عزم پر تاجروں کے اعتماد کو بھی متزلزل کر دیا ہے۔دریں اثناءحاجی غلام احمد لایگرو نے حکومت پر زور دیا کہ وہ واگزاری کے عمل کو تیز کرے اور زیر التوا ادائیگیوں کے اجراءکے لیے واضح ٹائم لائن فراہم کرے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں