0

جموں کشمیر میں ڈینگی کے معاملات میں اضافہ 122نئے کیس سامنے آئے

جموں سے 79اور وادی میں 2مریضوں کی نشاندہی ۔ اب تک اس بیماری سے چار افراد کی جان جاچکی ہے

سرینگر;20اکتوبر;223;وی او آئی;جموں و کشمیر کے مختلف حصوں سے آج ڈینگو کے ایک سو 22 نئے معاملے سامنے آئے ہیں جس سے اس سال اب تک کیسوں کی کل تعداد 3951 تک پہنچ گئی ہے ۔ جبکہ وادی کشمیر سے ڈینگو کے 2کیس اور جموں میں 79معاملات کی نشاندہی ہوئی ہے ۔ جبکہ رواں سیزن میں ڈینگی سے اب تک 4 افراد جاں بحق ہوچکے ہیں ۔ وائس آف انڈیا کے مطابق جموں کشمیر میں ڈینگی کے معاملات بڑھ رہے ہیں اور اب تک تین ہزار سے زائد کیسوں کا پتہ چلا ہے جبکہ آج وادی کشمیر سے دو مزید کیس سامنے آئے ہیں جبکہ جموں میں سب سے زیادہ کیس 79سامنے آئے ۔ محکمہ صحت کے ایک عہدیدار نے بتایا کہ آج صرف جموں ضلع سے 79 کیس رپورٹ ہوئے جبکہ کٹھوعہ سے 15، ادھم پور سے 11، سانبہ سے 7، رام بن سے 5، راجوری، پونچھ اور ڈوڈہ اضلاع سے ایک ایک اور کشمیر کے علاقے سے 2 کیس رپورٹ ہوئے ۔ انہوں نے مزید کہا کہ مثبت مریضوں میں 108 بالغ اور 14 بچے شامل ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ اب تک سب سے زیادہ 2634 معاملے جموں ضلع سے ہیں اس کے بعد ضلع ادھم پور میں 477، کٹھوعہ میں 307 اور سانبہ میں 260 کیس ہیں ۔ راجوری میں 74، رام بن میں 45، ریاسی میں 41، ڈوڈہ میں 30، پونچھ میں 25، کشتواڑ میں 4، کشمیر میں 21 اور یوٹی کے دیگر حصوں سے 29 معاملے سامنے آئے ہیں ۔ عہدیدار نے مزید بتایا کہ اب تک ڈینگی کے کل 1273 مریض ہسپتالوں میں داخل ہوچکے ہیں جن میں سے 1149 کو ڈسچارج کردیا گیا ہے اور 89 مریض تاحال زیر علاج ہیں جبکہ رواں سیزن میں ڈینگی سے اب تک 4 افراد جاں بحق ہوچکے ہیں ۔ \;34;ڈینگی کے کیسز میں ہر روز اضافہ ہو رہے ہیں ۔ اس ضمن میں محکمہ صحت نے شہریوں کو مشورہ دیا کہ وہ اپنے گھروں میں اور اس کے ارد گرد پانی کو جمع نہ ہونے دیں کیونکہ ٹھہرے ہوئے پانی میں ڈینگی کی افزائش کے لیے مچھر ذمہ دار ہیں ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں