0

جنوبی کشمیر میں سات مقامات پر چھاپہ ماری ، قابل اعتراض مواد ضبط : ایس آئی اے ترجمان

سری نگر،27ستمبر(یو این آئی)جموں وکشمیر پولیس کی سٹیٹ انوسٹی گیشن ایجنسی (ایس آئی اے) نے بینک اے ٹی ایم گارڈ سنجے شرما قتل کیس کے سلسلے میں بدھ کی صبح جنوبی کشمیر میں سات مقامات پر چھاپے مارے جس دوران موبائیل فونز اور قابل اعتراض مواد کو برآمد کرنے کا دعویٰ کیا گیا ہے۔

ایس آئی اے کے ایک ترجمان نے بتایا کہ بدھ کی صبح سٹیٹ انوسٹی گیشن نے اننت ناگ، شوپیاں اور پلوامہ میں سات مقامات پر چھاپے ڈالے۔

انہوں نے بتایا کہ پولیس اسٹیشن لیتر پلوامہ میں درج کیس زیر نمبر 14/2023کے سلسلے میں ایس آئی اے نے چھاپہ مار کارروائی انجام دی ۔

ان کے مطابق امسال فروی مہینے میں اے ٹی ایم گارڈ سنجے شرما کو اچھن پلوامہ میں بہیمانہ طریقے سے قتل کیا گیا ۔

موصوف ترجمان نے بتایا کہ اس کیس کے سلسلے میں ایس آئی اے نے چوتھی مرتبہ جنوبی کشمیر میں چھاپہ ماری کی جس دوران رہائشی مکانوں کی تلاشی لی گئی۔

انہوں نے مزید بتایا کہ خصوصی عدالت سے تلاشی وارنٹ حاصل کرنے کے بعد سات خصوصی ٹیموں نے اس تلاشی کارروائی میں حصہ لیا۔

ان کے مطابق تلاشی کارروائی کے دوران موبائیل فونزاور قابل اعتراض کاغٖذات کو برآمد کرکے ضبط کیا گیا۔

ترجمان کے مطابق بدھ کے روز پلوامہ میں ایک ، شوپیاں میں تین اور اننت ناگ میں تین مقامات پر چھاپے ڈالے گئے۔

ایس آئی اے نے اس عزم کو دہرایا ہے کہ وہ جلد ہی اس کیس کو عدالت کے روبرو پیش کرنے جارہی ہے۔

سٹیٹ انوسٹی گیشن ایجنسی نے واضح کیا ہے کہ قانون کی بالا دستی کو برقرار رکھنے اور سنجے شرما کے بہیمانہ قتل میں ملوث تمام ملزمان کو قانون کے مطابق سخت ترین سزا دلوانے میں کسی قسم کا کوئی دقیقہ فروگزاشت نہیں کیا جائے گا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں