0

خشک موسمی صورتحال ، وادی کشمیر میں صبح و شام کے اوقات سردی کی لہر میں اضافہ

محکمہ موسمیات کی جانب سے نیا موسمی کلینڈر جاری

14سے 18اکتوبر تک وسیع پیمانے پر بارشوں اور برفباری کی پیشگوئی ، اہم راستے بند ہونے کا امکان

سرینگر 12اکتوبر ; ایس این این ;موسم سرما کی آمد کے ساتھ ہی وادی کشمیر میں ر خشک موسم کی وجہ سے وادی کشمیر ایک بار پھر شدید سردی کی لہر لپیٹ میں آگئی ہے ۔ ادھر محکمہ موسمیات نے نیا موسمی کلینڈر جاری کرتے ہوئے 14سے 18اکتوبر تک پیر پنچال کے آر پار وسیع پیمانے پر بارشوں اور برفباری کی پیشنگوئی کی ہے ۔ سٹار نیوز نیٹ ورک کے مطابق موسم خشک رہنے کی وجہ سے درجہ حرار ت میں کافی کمی ریکارڈ کی گئی ہے جس کے نتیجے میں سردی کی لہر میں اضافہ دیکھنے کو ملا رہا ہے ۔ محکمہ کے مطابق درجہ حرارت میں کمی ہونے کے ساتھ ہی پوری وادی سخت ترےن سردی کے لپےٹ مےں آچکی ہے ۔ انہوں نے بتاےا کہ وادی کے ساتھ ساتھ لداخ خطہ بھی شدےد سردی کی لپےٹ مےں ہے ۔ ترجمان کے مطابق جموں خطہ مےں بھی درجہ حرارت مےں کافی گرآٹ آئی ہے ۔ ادھر محکمہ موسمیات نے نیا موسمی کلینڈر جاری کرتے ہوئے 14سے 18اکتوبر تک ٹنل کے آر پار وسیع پیمانے برفباری اور بارشوں کی پیشگوئی کی ہے ۔ محکمہ موسمیات کے مطابق مغربی ہوائیں جموں کشمیر میں اثر اندوز ہو رہی ہے جس سے موسمی صورتحال میں تبدیلی آسکتی ہے ۔ ڈائریکٹر محکمہ موسمیات سونم لوٹس نے بتایا کہ 13اکتوبر کو موسم مجموعی طور پر ابر آلود رہے گا جبکہ 14سے 18تک برفباری اور بارشیں ہونے کا بھی امکان ہے ۔ محکمہ موسمیات نے بتایا کہ تازہ مغربی ہوائیں جموں و کشمیر میں اثر اندوز ہو رہی ہے جس سے 14اور 18اکتوبر تک بارش اور برفباری کا امکان ہے ۔ محکمہ موسمیات کے ڈائریکٹر سونم لوٹس نے بتایا کہ کشمیر کے کچھ ایک مقامات پر جزوی طور پر ابر آلود رہنے کے ساتھ ہلکی بارش کا امکان ہے ۔ انہوں نے کہا کہ کل جموں و کشمیر میں موسم جزوی طور پر ابر آلود رہے گا ۔ تاہم 14سے 18اکتوبر تک جموں و کشمیر کچھ مقامات پر بارش اور برفباری کا امکان ہے ۔ ادھر شہر سرےنگر سمےت وادی بھر مےں سخت ترےن ٹھنڈ جاری رہی جبکہ رات کے وقت سردی کی شدت مےں اضافہ ہونے کے بعد لوگ اضافی بسترے ، کمبل ، گرم ملبوسات اور روم ہےٹر و واٹر بوتل جےسی چےزےں خرےدنے پر مجبور ہورہے ہےں اور متعلقہ دکاندار لوگوں کی مجبوری ےا ضرورت کا خوب فائدہ اٹھارہے ہےں اور انہوں نے ےکاےک ان سبھی چےزوں کی قےمتوں مےں من مانے طور اضافہ کر دےا ہے ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں