0

راجوری میں سرکاری ٹیچر پر پاسکو ایکٹ کے تحت مقدمہ درج

راجوری: راجوری پولیس نے ایک سرکاری ٹیچر کےخلاف پاسکو ایکٹ کے تحت مقدمہ درج کیا ہے۔ مقدمہ کے بعد ملزم ٹیچر کو گرفتار کرلیا گیا۔ ذرائع کے مطابق ملزم ساج تحصیل تھنہ منڈی کا رہنے والا ہے۔ وہ گورنمنٹ ہائر سیکنڈری اسکول، ساج میں بطور ٹیچر اپنی خدمت انجام دے رہا تھا۔

پولیس ذرائع کے مطابق ٹیچر پر چند طالبات نے جنسی استحصال کرنے کا الزام عائد کیا تھا۔ اس سلسلے میں چائلڈ ویلفیر کمیٹی راجوری میں شکایت درج کروائی گئی، جس پر چائلڈویلفیر کمیٹی کی طرف سے پولیس اسٹیشن تھنہ منڈی میں کاروائی کے لیے رجوع کیا گیا۔ تھنہ منڈی پولیس نے پاسکو ایکٹ کے تحت ایف آئی آر درج کر کے ٹیچر کو گرفتار کر لیا ہے۔ چائلڈویلفیر کمیٹی کےمطابق ٹیچر کی طرف سے اکثر و ببشتر زیر تعلیم بچیوں کو جنسی ذیادتی کے لیے تنگ کیا جا رہا تھا، جس کے بعد تحریری شکایت ملنے پر معاملے پر کاروای کیا گیا اور ٹیچر کو حراست میں لیا گیا، تاہم پولیس اس سلسلے میں مزید کاروائی کررہی ہے
ذرائع کے مطابق اس واقعے کے بعد سے علاقے کے لوگ اپنی بچیوں کی تعلیم کے تئیں کافی فکر مند ہیں۔ انھیں خدشہ ہے کہ کہیں علاقے میں اس طرح کے مزید واقعات نہ ہونے لگیں، جس سے بچیوں کے لیے حصول تعلیم مشکل ہو جائے۔ علاقے کے لوگوں نے اس معاملے میں پولیس سے جلد سے جلد کاروائی کی مانگ کی ہے-

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں