0

سال 1947 میں گاندھی جی کو صرف کشمیر میں بھائی چارے اور روشنی کی کرن نظر آئی; ڈاکٹر فاروق

گاندھی جی کی اَن تھک کوششوں اور قربانیوں کی بدولت ہی ہندوستان انگریزوں کی غلامی سے آزاد ہوا

سرینگر ;223; 02اکتوبر ایس این این ;223223;سال 1947 میں گاندھی جی کو صرف کشمیر میں بھائی چارے اور روشنی کی کرن نظر آئی ہے کی بات کرتے ہوئے نیشنل کانفرنس کے صدر ڈاکٹر فاروق عبداللہ نے کہا کہ گاندھی جی کی اَن تھک کوششوں اور قربانیوں کی بدولت ہی ہندوستان انگریزوں کی غلامی سے آزاد ہوا ۔ سٹا ر نیوز نیٹ ورک کے مطابق نیشنل کانفرنس کی جانب سے شیر کشمیر بھون جموں میں گاندھی جینتی کے سلسلے میں ایک تقریب منعقد ہوئی، جس میں موہن داس کرم چند گاندھی کو154ویں برسی پر خراج عقیدت پیش کیا گیا ۔ تقریب کی صدارت صدرِ جموں وکشمیر نیشنل کانفرنس ڈاکٹر فاروق عبداللہ نے کی ۔ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے ڈاکٹر فاروق عبداللہ نے گاندھی جی کو خراج عقیدت پیش کرتے ہوئے کہاکہ گاندھی جی کی اَن تھک کوششوں اور قربانیوں کی بدولت ہی ہندوستان انگریزوں کی غلامی سے آزاد ہوا ۔ انہوں نے کہا کہ آنجہانی گاندھی جی ہمیشہ عدم تشدد کے حامی رہے اور تشدد کیخلاف رہے ۔ انہوں نے ذات پات، اونچ نیچ کیخلاف تحریک شروع کی اور ہمیشہ آئین اور جمہوریت کی بالادستی کے وکیل رہے ۔ انہوں نے کہاکہ گاندھی جی کے مشن کو اپنانا وقت کی اہم ضرورت ہے کیونکہ ملک میں فرقہ پرستی کے بڑھتے ہوئے رجحان سے اقلیتوں اور پسماندہ طبقوں سے تعلق رکھنے والی آبادی عدم تحفظ کا شکار ہوگئی ہے جو ملک کی آزادی اور سالمیت کیلئے باعث تشویش ہے ۔ ڈاکٹر فاروق عبداللہ نے کہا کہ ملک کے بٹوارے کے وقت جب چہارسو خون کی ندیاں بہائی جارہی تھیں گاندھی جی کو اُس وقت بھی کشمیر میں بھائی چارے اور مذہبی ہم آہنگی کی کرن نظر آئی ۔ اس موقعے پر سابق وزیر اعظم ہند آنجہانی لال بہادر شاتری کو بھی خراج عقیدت پیش کیا گیا ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں