47

سال 2024میں انتخابات میں بی جے پی کی شاندار جیت ہو گی اور کمل کاپھول شان سے کھلے گا

کانگریس 4G پارٹی ،یعنی چار نسلوں کی پارٹی (جواہر لال نہرو، اندرا گاندھی، راجیو گاندھی اور راہول گاندھی):امت شاہ
سرینگر /27اگست
کشمیر سے کینا کماری تک کمل کو پھول شان سے کھلے کا اعلان کرتے ہوئے وزیر داخلہ امیت شاہ نے کہا کہ کانگریس 4G پارٹی ہے، جس کا مطلب ہے چار نسلوں کی پارٹی (جواہر لال نہرو، اندرا گاندھی، راجیو گاندھی اور راہول گاندھی)ہے ۔ انہوں نے کہا کہ سال 2024میں ایک مرتبہ پھر بی جے پی اقتدار میں آئیں گی اور گزشتہ 9سالوں کے دوران ترقی کا جو کام ہاتھ میں لیا گیا ہے اس کو مزید تقویت بخشی جائے گی ۔ سی این آئی مانیٹرنگ ڈیسک کے مطابق وزیر داخلہ امیت شاہ نے تلنگانہ میں عوامی ریلی سے خطاب کیا ۔ ریلی سے خطاب کرتے ہوئے امیت شاہ نے کہا بی آر ایس اور کاگریس پارٹی پر طنز کرتے ہوئے کہا کہ کانگریس پارٹی 4G پارٹی ہے، جس کا مطلب ہے چار نسلوں کی پارٹی (جواہر لال نہرو، اندرا گاندھی، راجیو گاندھی اور راہول گاندھی) جبکہ بی آر ایس 2G پارٹی ہے جس کا مطلب ہے دو نسلوں کی پارٹی (KCR اور بعد میں KTR))، لیکن اس بار نہ تو 2G جیتے گا اور نہ ہی 4G جیتے گا کیونکہ یہ وقت بی جے پی کے آنے کا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ ملک کی ہر ریاست اور مرکز کے زیر انتظام علاقے میں کمل کا پھول آن بان اور شان سے کھلیں گا اور کوئی اس کی جگہ نہیں لیں سکتا ہے ۔ وزیر داخلہ شاہ نے کہا”ہمیں معلوم ہے کہ آپ (کے سی آر) کے ٹی آر کو ریاست کا وزیراعلیٰ بنانا چاہتے ہیں، لیکن اس بار نہ کے سی آر سی ایم بنیں گے اور نہ ہی کے ٹی آر۔ اس بار بی جے پی سے کوئی وزیر اعلیٰ بنے گا۔ انہوں نے کہا کہ صرف تلنگا نہ میںہی نہیں بلکہ سال 2024میں منعقد ہونے والے انتخابات پر بی جے پی کی خاص نظر ہے اور کہا کہ میںیقین کے ساتھ کہتا ہوں کہ بی جے پی اکثریت کے ساتھ جیت حاصل کرکے اقتدار حاصل کریں گی ۔ انہوں نے کہا کہ کے سی آر حکومت میں کسانوں کو گزشتہ نو سالوں سے نظر انداز کیا جارہا ہے۔گزشتہ نو سالوں میں کسانوں کو نظر انداز کیا گیا۔سی ایم کے سی آر اور بی آر ایس حکومت کے تحت کسانوں کو پچھلے 9 سالوں سے نظر انداز کیا گیا ہے۔ بارش اور قدرتی آفات کی وجہ سے کسانوں کو بہت زیادہ نقصان ہوا ہے۔ تلنگانہ کے قرضوں کی معافی نہیں دی گئی۔ لیکن وزیر اعظم مودی کی سربراہی والی سرکار میں ہر طبقہ کی ترقی ہوئی اور گزشتہ 9سالوں کے دوران ہم نے دیکھا کہ ملک کس طرح کی ترقی کی اونچائیوں تک پہنچ گیا ہے ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں