0

سی آئی ایس ایف کوٹ بھلوال جیل کی سیکورٹی سنبھال لے گی

سیکورٹی ایجنسی نے پہلے ہی سرینگر سنٹرل جیل کی بیرونی حفاظت اور نگرانی کا کام سنبھالا ہے

سرینگر;18اکتوبر;ایس این این;سی آئی ایس ایف فورسز دستہ کوٹ بلوال جیل کی حفاظتی کی ذمہ داری سنبھالے گا جہاں پر مجموعی طور پر 900کے قریب قیدی موجود ہیں ۔ کوٹ بلوال جیل میں 579 زیر سماعت، 353 نظربند، اور 67 مجرم ہیں ، ذریعہ نے کہاکہ ان میں سے 17 غیر ملکی شہری ہیں ۔ سی آئی ایس ایف نے رواں سال کے ستمبر مہینے میں سرینگر سنٹرل جیل کی حفاظتی ذمہ داری سنبھالی تھی ۔ سٹار نیوز نیٹ ورک کے مطابق مرکزی سیکورٹی فورس (سی آئی ایس ایف) جو کہ مرکزی وزارت داخلہ کے تحت مسلح پولیس فورس میں سے ایک ہے اس ہفتے جموں کی کوٹ بھلوال جیل کی سیکورٹی سنبھال لے گی ۔ مرکز کے زیر انتظام علاقہ جس میں 900 سے زیادہ قیدی تھے جن میں کچھ غیر ملکی شہری بھی شامل تھے ۔ سی آئی ایس ایف کوٹ بھلوال جیل کی سیکورٹی سنٹرل ریزرو پولیس فورس (سی آر پی ایف) سے سنبھالے گی ۔ ایم ایچ اے کے تحت ایک اور مسلح پولیس فورس ط جو برسوں سے اسٹیبلشمنٹ کی حفاظت کر رہی ہے ۔ یہ پیشرفت اس وقت سامنے آئی ہے جب ایم ایچ اے نے 13 اکتوبر کو سی آئی ایس ایف کو کوٹ بھلوال جیل کی سیکورٹی سی آر پی ایف سے لینے کا حکم جاری کیا تھا ۔ یہ جموں و کشمیر کی دوسری جیل ہوگی جسے ;67738370; ;245; ایک نیم فوجی دستے کے ذریعہ محفوظ کیا جائے گا جس کی موجودہ تعداد تقریباً 1;46;75 لاکھ اہلکاروں کی ہے ۔ 3 اکتوبر کو، سی آئی ایس ایف نے اس سال 22 ستمبر کو فورس کو جاری کردہ ایم ایچ اے کے حکم کے بعد سی آر پی ایف سے سری نگر جیل کی حفاظت بھی سنبھال لی تھی ۔ اس ضمن میں سی آئی ایس ایف کے ڈپٹی انسپکٹر جنرل (آپریشنز) شریکانت کشور نے کہاکہ تقریباً تمام طریقہ کار مکمل ہو چکے ہیں ۔ سی آئی ایس ایف دو تین دنوں کے اندر کوٹ بھلوال جیل کی سیکورٹی سی آر پی ایف سے سنبھال لے گا ۔ سی آئی ایس ایف کوٹ بھلوال جیل کے اندرونی اور بیرونی حصے میں سیکورٹی فراہم کرے گا ۔ ہمارے اہلکار جیل کے احاطے کی ہر وقت حفاظت کریں گے ۔ سی آئی ایس ایف کے ایک اور ذراءع کے مطابق، تقریباً 260;245;265 اہلکار، ڈپٹی کمانڈنٹ سطح کے افسر کے تحت، کوٹ بھلوال جیل میں تعینات کیے جائیں گے، جو جموں و کشمیر کی دو ہائی سکیورٹی سنٹرل جیلوں میں سے ایک ہے ۔ جموں و کشمیر کی سری نگر اور کوٹ بھلوال جیلیں انتہائی حساس ہیں ۔ ان جیلوں میں کئی خطرناک دہشت گرد اور بدنام زمانہ مجرم بند ہیں ۔ کوٹ بھلوال میں 900 اور سری نگر کی جیلوں میں 500 سے زائد قیدی ہیں ۔ کوٹ بھلوال جیل میں 579 زیر سماعت، 353 نظربند، اور 67 مجرم ہیں ، ذرایع نے کہاکہ ان میں سے 17 غیر ملکی شہری ہیں ۔ اس وقت قیدیوں کے قیام کے لیے مختلف نوعیت کی تیرہ جیلیں ہیں جن میں کوٹ بھلوال اور سری نگر کی دو سینٹرل جیلیں شامل ہیں ۔ جموں ، کٹھوعہ، ادھم پور، راجوری، پونچھ، بارہمولہ اور کپواڑہ اور لیہہ میں آٹھ ڈسٹرکٹ جیلیں اور ہیرا نگر، ریاسی اور کشتواڑ میں تین سب جیلیں ہیں ۔ ان جیلوں میں قیدیوں کی کل گنجائش 2775 ہے ۔ کوٹ بھلوال سنٹرل جیل کا حفاظتی احاطہ حاصل کرنے کے فوراً بعد حساس اسٹیبلشمنٹ ہندوستان کی دیگر اہم ترین بنیادی ڈھانچے کی سہولیات جیسے جوہری تنصیبات، خلائی تنصیبات، بندرگاہوں اور پاور پلانٹس میں شامل ہوگی ۔ سی آئی ایس ایف کی حفاظتی دستے67 ہوائی اڈوں ، دہلی میٹرو، اہم سرکاری عمارتوں اور تاریخی ورثے کی یادگاروں کی بھی حفاظت کرتی ہے ۔ ;67738370; کے پاس ایک خصوصی ;867380; سیکورٹی عمودی بھی ہے جو اہم محافظوں کو چوبیس گھنٹے سیکورٹی فراہم کرتا ہے ۔ نومبر 2008 میں ممبئی کے دہشت گردانہ حملے کے بعدسی آئی ایس ایف کے مینڈیٹ کو وسیع کیا گیا تھا تاکہ نجی کارپوریٹ اداروں کو بھی حفاظتی تحفظ فراہم کیا جا سکے ۔ سی آئی ایس ایف جو 1969 میں وجود میں آئی تھی تاکہ کچھ حساس پبلک سیکٹر کے اداروں کو صرف تین بٹالین کی طاقت کے ساتھ مربوط حفاظتی احاطہ فراہم کیا جا سکے ۔ اس کے بعد سے اب تک 1,71,635 اہلکاروں کی موجودہ تعداد کے ساتھ ایک اعلیٰ کثیر ہنر مند تنظیم بن گئی ہے ۔ سی آئی ایس ایف اس وقت ملک کے طول و عرض میں 357 اداروں کو سیکورٹی فراہم کرتا ہے ۔ سی آئی ایس ایف کا اپنا فائر ونگ بھی ہے جو مذکورہ اداروں میں سے 104 کو خدمات فراہم کرتا ہے ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں