0

سی ایس آئی آر کی یوم جمہوریہ کی جھانکی جموں و کشمیر میں لیوینڈر کی کاشت کے ذریعہ جامنی انقلاب کو اجاگر کیا

نئی دہلی، 27 جنوری (یو این آئی) کونسل آف سائنٹفک اینڈ انڈسٹریل ریسرچ (سی ایس آئی آر ) کے یوم جمہوریہ کی جھانکی نے جموں و کشمیر میں لیوینڈر کی کاشت کے ذریعہ شروع ہونے والے جامنی انقلاب کے آغاز پر روشنی ڈالی۔ سی ایس آئی آر کی سائنسی مداخلتوں نے لیوینڈر کی کاشت میں غیر معمولی ترقی اور لیوینڈر کی مصنوعات کی ترقی کا باعث بنی ہے جس سے لیوینڈر کو لیب سے مارکیٹ تک لے جایا گیا ہے اور جموں و کشمیر میں کئی زرعی اسٹارٹ اپس کا آغاز ہوا ہے۔ اس جھانکی نے سی ایس آئی آر کے ذریعہ تیار کردہ ہندوستان کے پہلے خواتین دوست، کمپیکٹ، الیکٹرک ٹریکٹر کی بھی نمائش کی۔ بصری طور پر یہ جھانکی یوم جمہوریہ پریڈ 2024 کے وکست بھارت کے تھیم سے ہم آہنگ ہے۔
سی ایس آئی آر نے جموں و کشمیر کے پلین علاقوں میں کاشت کے لیے موزوں لیوینڈر کی ایک اعلیٰ قسم تیار کی اور کسانوں کو مفت پودے اور ایک سرے سے دوسرے سرے تک کی زرعی ٹیکنالوجی فراہم کیں اور جموں و کشمیر کے کئی علاقوں میں ضروری تیل نکالنے کے لیے کشید یونٹ بھی لگائے۔ جموں و کشمیر میں لیوینڈر کی کاشت کی کامیابی نے اسے ’جامنی انقلاب‘ کا نام دیا۔
جھانکی کے سامنے والے حصے میں لیوینڈر کی کافی کاشت اور جموں و کشمیر سے تعلق رکھنے والی 21ویں صدی کی بااختیار خاتون کسان مجسمہ کی نمائندگی کی گئی تھی۔ درمیانی حصے میں سی ایس آئی آر کے سائنسدانوں کی سائنسی مداخلتوں اور کسان کو پودے لگانے کا معیاری مواد فراہم کرنے کی نمائش کی گئی اور لیوینڈرکی کاشت کی زمین پر کام کرنے والے کسانوں کو بھی دکھایا گیا۔
زرعی مکینیکل ٹکنالوجی کے تحت مقامی طور پر تیار کردہ ہندوستان کا پہلا خواتین دوست کمپیکٹ الیکٹرک ٹریکٹر سی ایس آئی آر ، پی آر آئی ایم اے ای ٹی 11 کی نمائش کی گئی۔ زرعی تکنیکی ترقیوں پر روشنی ڈالتے ہوئے لیوینڈر کے پھولوں سے ضروری تیل نکالنے کے لیے ڈسٹلیشن یونٹ بھی دکھایا گیا۔
عقبی حصے میں ہندوستان میں ایگری اسٹارٹ اپ کا تصور اور لیوینڈر پر مبنی مصنوعات (پرفیوم، تیل، بخور کی چھڑیاں) کی برآمدات شامل ہیں۔ تمام خواتین پر مشتمل سی ایس آئی آر کی جھانکی نے کسانوں کی آمدنی بڑھانے، ناری شکتی ، ایگری اسٹارٹ اپ اور عالمی کاروبار کے لیے حکومت کے سائنسی پیش رفت کے اقدامات کے تحت کامیابیوں کی نمائش کی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں