0

شری امرناتھ جی یاترا کے لئے سخت سیکورٹی بند وبست کیا گیا ہے: منوج سنہا

سری نگر، 22 جون (یو این آئی) سالانہ شری امرناتھ جی یاترا کے آغاز سے ایک ہفتہ قبل جموں وکشمیر کے لیفٹیننٹ گورنر منوج سنہا کا کہنا ہے کہ یاترا کے کامیاب انعقاد کو یقینی بنانے کے لئے سخت حفاظتی بندو بست کے ساتھ ساتھ دوسری تمام ترسہولیات کا بھی بہترین انتظام کیا گیا ہے۔
یہاں راج بھون میں ورچول ‘پرتھم پوجا’ میں شرکت کرنے کے بعد انہوں نے میڈیا کو بتایا: ’29 جون سے ملک بھر کے یاتری ‘بابا امرناتھ’ کا درشن کر سکتے ہیں جس کے لئے تمام تر ضروری انتظامات کو حتمی شکل دی گئی ہے اور سیکورٹی کا بھی سخت بندو بست کیا گیا ہے’۔
ان کا کہنا تھا کہ شرائن بورڈ اور جموں وکشمیر انتظامیہ نے یاتریوں کے لئے خصوصی انتظامات کئے ہیں۔
انہوں نے کہا کہ گذشتہ دو برسوں کے دوران یاتریوں کے لئے کی جانی والی سہولیات میں کافی بہتری آئی ہے۔
مسٹر سنہا نے کہا کہ پوتر گھپا کی طرف جانے والی سڑکوں کو اپ گریڈ کیا گیا ہے اور بارڈر روڈس آرگنائزیشن نے اس سال کچھ حصوں کو کشادہ بھی کیا ہے۔
انہوں نے کہا: ‘میں سمجھتا ہوں کہ اس سال یاتری ہموار اور احسن طریقے سے یاترا کریں گے’۔
ان کا کہنا ہے کہ یہاں ہمیشہ تمام مذاہب سے وابستہ لوگوں نے یاترا کی حمایت کی ہے۔
انہوں نے کہا: ‘میں لوگوں خاص طور پر ان علاقوں کے لوگوں جہاں سے یاترا نکلتی ہے، کو اپیل کرتا ہوں کہ وہ اپنی دیرینہ روایت کو زندہ رکھتے ہوئے یاترا کی بھر پور حمایت کریں اور یاتریوں کا خیال رکھیں’۔
لیفٹیننٹ گورنر نے کہا کہ پر امن یاترا سے دنیا میں جموں و کشمیر کے متعلق ایک اچھا پیغام عام ہوجاتا ہے۔
قابل ذکر ہے کہ امسال 52 دنوں پر محیط سالانہ شری امرناتھ جی یاترا 29 جون سے شروع ہوگی۔
یاترا حسب روایت 48 کلو میٹر طویل بنون – پہلگام اور 14 کلو میٹر طویل بالتل روٹس سے شروع ہوگی۔
سال گذشتہ زائد از ساڑھے چار لاکھ یاتریوں نے شری امر ناتھ جی یاترا کی تھی۔
دریں اثنا ایڈیشنل ڈائریکٹر جنرل آف پولیس جموں نے یاترا کے پیش نظر 270 کلو میٹر طویل سری نگر – جموں قومی شاہراہ کی سیکورٹیئ صورتحال کا جامع جائزہ لیا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں