0

شری امرناتھ جی یاترا 2023 کے سلسلے میں کئے گئے کاموں سے متعلق بلیں واگزار نہ کرنے پر ٹھیکیدار پہلگام ڈولپمنٹ اتھارٹی سے نالاں

سرینگر 30 اکتوبر//یو پی آئی // معروف سیاحتی مقام پہلگام میں ٹھیکیداروں نے رقوماتی بلیں واگزار نہ کرنے پر پہلگام ڈولپمنٹ اتھارٹی کے خلاف برہمی کا اظہار کرتے ہوئے مانگ کی ہے کہ انکی رکی پڑی بلیں فوری طور پر واگزار کی جائیں ورنہ انہیں سڑکوں پر آنے کے لئے مجبور ہو نا پڑیگا۔ اطلاعات کے مطابق رواں برس شری امرناتھ یاترا کے 2023 کے سلسلے میں پہلگام ڈولپمنٹ اتھارٹی کی جانب سے مختلف کاموں کیلئے ٹینڈروں کے ذریعے ٹھیکیداروں کو کام الاٹ کیے گئے تاکہ یاتریوں کو تمام طرح کی سہولیات بہم رہیں چنانچہ ٹھیکیداروں نے اگرچہ الاٹ شدہ کام وقت مقررہ پراحسن طریقے سے پائے تکمیل تک پہنچا دئے مگر ٹھیکیداروں کا کہناہے کہ یاترا کو بھی اختتام پزیر ہوتے تقریباً دو ماہ کا عرصہ بیت چکا ہے مگر انکی بلوں کو واگزار کرنے میں محکمہ پی ڈی اے ابھی بھی اپنی بے حسی کا مظاہرہ کر رہا ہے جسکی وجہ سے انہیں شدید مالی مشکلات سے دوچار ہونا پڑ رہا ہے۔ نمایندے زلفی مسعود کے مطابق ٹھیکیداروں کا مزید کہنا ہے کہ ان میں سے متعدد ٹھیکیداروں نے بینکوں اور دیگر مالیاتی اداروں سے قرضہ لے کر کام کئے جبکہ ایسے بھی کئی اور ٹھیکیدار ہیں جنہوں نے اسی آس میں قیمتی اشیاء بیچ ڈالی کہ وقت پر ہی انہیں اپنا پیسہ ملے گا مگرپی ڈی اے کی عدم سنجیدگی کے باعث ایسا ممکن نہ ہو پایا ٹھیکیداروں نے ایل جی اور چیف سکریٹری جموں وکشمیرسے مطالبہ کیا ہے کہ وہ پی ڈی اے دفتر میں دھول چاٹ رہی بلوں کو واگزار کرانے میں ذاتی مداخلت کریں تاکہ ٹھیکیداروں کے مالی مشکلات کا ازالہ ہو سکے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں