0

شمالی فوج کے کمانڈر نے جاری کوکرناگ انکاؤنٹر کی آپریشنل صورتحال کا جائزہ لیا

سرینگر۔ 16؍ ستمبر۔ ایم این این۔ شمالی فوج کے کمانڈر لیفٹیننٹ جنرل اوپیندر دویدی نے ہفتہ کو جنوبی کشمیر ضلع اننت ناگ کے کوکرناگ جنگلاتی علاقے میں جاری آپریشن کی آپریشنل صورتحال کا جائزہ لیا۔انہیں گراؤنڈ کمانڈرز نے انتہائی شدت کے آپریشن کے بارے میں بریفنگ دی جس میں نگرانی اور فائر پاور کی ترسیل کے لیے ہائی ٹیک آلات استعمال کیے جا رہے ہیں۔ اس سے پہلے بھارتی حکام نے بتایا کہ پاکستانی فوج نے ہفتہ کو جموں و کشمیر کے بارہمولہ ضلع میں لائن آف کنٹرول کو عبور کرنے کی کوشش کے دوران دراندازی کرنے والے دہشت گردوں اور ہندوستانی فوج کے کواڈ کاپٹروں کو کور فائر دیا جسے تین عسکریت پسندوں کی ہلاکت کے ساتھ ناکام بنا دیا گیا۔شمالی کشمیر کے اُڑی میں ایک پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے، بریگیڈیئر پی ایم ایس ڈھِلن نے کہا کہ ایل او سی کے ساتھ اُڑی سیکٹر میں ہتھلنگا میں آپریشن ہفتہ کی صبح پاکستان میں مقیم تنظیموں کی دراندازی کی کوششوں کے بارے میں مخصوص معلومات کے بعد شروع کیا گیا تھا۔’’ہمیں انٹیلی جنس اطلاعات موصول ہوئی تھیں کہ پاکستانی تنظیمیں جموں و کشمیر میں امن کو غیر مستحکم کرنے کے لیے اڑی میں دراندازی کی کوشش کر رہی ہیں۔ لہذا، ہم نے اپنے انسداد دراندازی اور نگرانی کے گرڈ کو مضبوط کیا۔آج صبح 6.40 بجے، خراب موسم کے باوجود، ایک گھات لگا کر حملہ کرتے ہوئے دیکھا کہ تین سے چار دہشت گرد ہتھلنگہ علاقے میں ایل او سی کو پار کرنے کی کوشش کر رہے ہیں۔ فوری طور پر رابطہ قائم کیا گیا اور فائر فائٹ دو گھنٹے تک جاری رہا۔’ ‘افسر نے کہا کہ فوج نے دہشت گردوں کو بے اثر کرنے کے لیے انڈر بیرل گرینیڈ لانچرز ، ملٹی گرینیڈ لانچرز اور راکٹ لانچرز کا استعمال کیا گیا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں