0

صداقت پر مبنی سیاسی بیانیہ اپنی پارٹی کی بڑھتی عوامی مقبولیت کا مظہر:الطاف بخاری

معروف ماہر ِ معالج ڈاکٹر نور الدین شاہ کاپارٹی میں شمولیت پر والہانہ استقبال

سرینگر:جنوبی کشمیر کے ترہگام کپواڑہ سے تعلق رکھنے والے معروف ماہر ِ معالج ڈاکٹر نور الدین شاہ نے اپنے سینکڑوں حمایتوں سمیت جمعرات کو سرینگر میں پارٹی صدر دفترپر منعقدہ پروقار تقریب کے دوران اپنی پارٹی میں شمولیت اختیار کی۔ پارٹی صدر سید محمد الطاف بخاری نے دیگر سنیئرلیڈران کے ہمراہ ڈاکٹرنور الدین شاہ ساتھیوں سمیت والہانہ استقبال کیا۔
قابل ذکر ہے کہ ڈاکٹر نور الدین شاہ نہ صرف شعبہ ِ طب میں معروف نام ہے بلکہ اپنے آبائی گاو ¿ں میں ایک معتبر سماجی شخصیت بھی ہیں۔ انہوں نے طبی پیشہ کو چھوڑنے کا انتہائی اہم فیصلہ لیکر سیاست میں قدم رکھاجوکہ اب لوگوں کی سیاسی میدان میں خدمت ِ حلق کا جذبہ رکھتے ہیں۔
اس موقع پر الطار بخاری نے پارٹی کی بڑھتی عوامی مقبولیت اور اعتباریت پر اطمینان کا اظہار کرتے ہوئے کہاکہ ”مجھے اِس بات کی بے حد خوشی ہے کہ ہر گذرتے دن کے ساتھ جموں وکشمیرمیں اپنی پارٹی عوامی سطح پر مقبولیت حاصل کر رہی ہے اور اطراف واکناف سے سرکردہ شخصیات اور تجربہ کار سیاستدان ہمارے کاررواں کا حصہ بن رہے ہیں۔ اپنی پارٹی کو واحد ایسی سیاسی جماعت ہونے کا امتیاز حاصل ہے کہ اِس نے مارچ 2020میں قیام کے بعد مختصر مدت کے اندر اِتنی عوامی پذیرائی حاصل کی“۔
انہوں نے کہا”اِس کا سہرا پارٹی کے غیر مبہم ایجنڈے اور صداقت پر مبنی سیاست کو چاتا ہے جس نے ہمیں طاقت بخشی“۔ڈاکٹر نورالدین شاہ کوپارٹی کو خوش آمدید کہتے ہوئے سید محمد الطاف بخاری نے کہا”مجھے آپ سب کو پارٹی میں خیر مقدم کرتے ہوئے خوشی محسوس ہورہی ہے۔ ہم عرصہ دراز سے ڈاکٹر نورالدین شاہ اور اُن کے حمایتوں کو پارٹی میں شامل ہونے کے لئے آمادہ کر رہے تھے اور بالآخر آج اِ وہ ہماری جماعت کا ناقابل ِ تنسیخ حصہ بن گئے ہیں“۔

الطاف بخاری نے مزید کہا”آج ، میں آپ کو یقین دلاتا ہوں کہ یہ جماعت جموں وکشمیر آپ کو اپنے لوگوں کی خدمت کے لئے قابل ِ اعتماد پلیٹ فارم فراہم کرے گی ۔ہماری لگن امن، خوشحالی اور جموں و کشمیر کی ترقی کے ساتھ ساتھ لوگوں کو معاشی وسیاسی بااختیار بنانے کے لیے کام کرنے میں مضمر ہے”۔

اس پروقار پروگرام میں الطاف بخاری کے علاوہ محمد اشرف میر، منتظر محی الدین، راجہ منظور خان، فاروق اندرابی، حاجی پرویز احمد، مظفر رضوی، دلشادہ شاہین، جاوید مرچال، خالد بڈھانہ، جاوید جیلانی، بلال عارف وغیرہ بھی موجود تھے۔

ڈاکٹر نور الدین شاہ کے ہمراہ پارٹی کا دامن تھامنے والوں میں محمد امین پیر، حاجی ثنا اللہ شاہ، حاجی جی ایم آہنگر، کیپٹن بشیر احمد خان، انجینئر نذیر احمد ملک، غلام رسول شاہ، محمد سلطان ملک، غلام محمد شاہ، ماسٹر محمد اکبر شاہ، حاجی غلام محی الدین شاہ، منظور احمد زرگر، بلال رضوان، غلام حسن خان، ہلال احمد ملک، مولانا عبدالرشید، محمد شفیع حجام، پیر علی محمد، منظور احمد خان، عبدلعزیز شاہ، علی محمد شاہ، اشفاق احمد شاہ، جہانگیر احمد نجار، نامدار شیخ، آصف علی خان، عاشق حسین میر، محمد گلزار شیخ، عبدالغنی نجار، مشتاق احمد آہنگر، غلام محمد خان، عامر خان، حاجی محمد اکبر لون، جہانگیر کٹھانہ وغیرہ قابل ِ ذکر ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں