0

لداخ کی مجموعی ترقی کو یقینی بنانے کیلئے ہر سال 5958 کروڑ روپے کی رقم مختص کی گئی

وزیراعظم کے ترقیاتی پیکیج کے تحت منظور شدہ منصوبوں کو جلد از جلد مکمل کرنے کی کوششیں جاری

لہہ اور کرگل میں 37 ہیلی پیڈز کی تعمیر اور ہیلی کاپٹروں کے قیام کیلئے دو ہینگروں کا کام جاری ;223; وزارت داخلہ

سرینگر;11اکتوبر;ایس این این;مرکزی وزارت داخلہ نے اعلان کیا ہے کہ مرکز کے زیر انتظام علاقہ لداخ کی مجموعی ترقی کو یقینی بنانے کیلئے ہر سال 5958 کروڑ روپے کی رقم مختص کی گئی ہے اور سرد خطے میں کاربن کے اخراج کو کم کرنے کے لیے کافی پیش رفت ہوئی ہے ۔ مزید یہ کہ وزیراعظم کے ترقیاتی پیکیج کے تحت منظور شدہ منصوبوں کو جلد از جلد مکمل کرنے کی کوششیں کی جا رہی ہیں ۔ سٹار نیوز نیٹ ورک مانیٹرنگ ڈیسک کے مطابق مرکزی وزرات داخلہ کی جانب سے جاری کردہ سالانہ رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ علاقہ لداخ کی مجموعی ترقی کو یقینی بنانے کیلئے ہر سال 5958 کروڑ روپے کی رقم مختص کی گئی ہے ۔ وزرات داخلہ کی جانب سے سال 2022-23کیلئے جاری اپنی رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ سال 2022-21سے مرکز کے زیر انتظام علاقے لداخ کو اس کی مجموعی ترقی کو یقینی بنانے کیلئے ہر سال 5,958;46;00 کروڑ روپے مختص کیے گئے ہیں ۔ وزارت داخلہ نے رپور ٹ میں کہا ’’وزیراعظم کے ترقیاتی پیکیج کے تحت لداخ میں 21,441 کروڑ روپے کی لاگت سے نو پروجیکٹوں پر عمل درآمد کیا جا رہا ہے ۔ 9 منصوبوں میں سے 2 منصوبے مکمل ہو چکے ہیں ۔ مزید برآں ایک پروجیکٹ کو تبدیل کرنے کا امکان تلاش کیا جا رہا ہے اور باقی 6 پروجیکٹوں پر عمل درآمد کے مختلف مراحل ہیں ‘‘ ۔ کاربن نیوٹرل اقدامات کی طرف اشارہ کرتے ہوئے وزارت داخلہ نے کہا کہ لیہہ کے فیانگ میں بیٹری سٹوریج کے ساتھ 50 میگاواٹ کے سولر پاور پلانٹ کے انجینئرنگ، پروکیورمنٹ اور کنسٹرکشن (ای پی سی) کا ٹھیکہ ٹاٹا پاور کو سولر انرجی کارپوریشن آف انڈیا لمیٹڈ نے ایک اندازے کے ساتھ دیا ہے ۔ 385 کروڑ روپے کی لاگت سے کام شروع کر دیا گیا ہے ۔ بجلی کے شعبے میں کاربن فوٹ پرنٹ کو کم کرنے کی طرف ایک قدم میں این ایچ پی سی نے لیہہ اور کرگل اضلاع میں ’’پائلٹ گرین ہائیڈروجن ٹیکنالوجیز‘‘کی ترقی کیلئے لداخ خود مختار پہاڑی ترقیاتی کونسلز ،لیہہ اور کرگل کے ساتھ مفاہمت کی یادداشت پر دستخط کیے ہیں ۔ اسی طرح سے رپورٹ میں مرکز کے زیر انتظام علاقہ لداخ کے دور دراز علاقوں میں ہوائی رابطے کی سہولیات کے بارے میں کہا گیا کہ لیہہ اور کرگل دونوں اضلاع میں 37 ہیلی پیڈز کی تعمیر;223;اپ گریڈیشن اور لیہہ اور کرگل میں ایک ایک ہیلی کاپٹروں کے قیام کے لیے دو ہینگروں کا کام جاری ہے ۔ ;46;اس کے علاوہ 981 اسکولوں میں سے 854 اسکولوں کو اسکیم کے تحت پینے کے پانی کی سہولت فراہم کی گئی ہے اور 944 آنگن واڑی مراکز میں سے 882 آنگن واڑی مراکز کو بھی پینے کے پانی کی سہولت فراہم کی گئی ہے ۔ رپورٹ کے مطابق مالی سال 2022-23کے دوران 756122 سیاحوں نے لداخ کا دورہ کیا جس میں 23698 غیر ملکی سیاح اور 732424 ملکی سیاح شامل ہیں ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں