0

ملک میں کوآپریٹو سوساءٹیز کو فروغ مل رہا ہے جس کی وجہ سے عام لوگوں کو فائدہ مل رہا ہے: امت شاہ

ایکسپورٹ باڈی این سی ای ایل کو اب تک 7,000 کروڑ روپے کے آرڈر ملے ہیں ۔

سرینگر;23اکتوبر;ایس این این ;وزیرداخلہ امت شاہ نے کہا ہے کہ ملک میں نئی قائم کردہ نیشنل کوآپریٹو فار ایکسپورٹ لمیٹڈ (این سی ای ایل) نے اب تک 7,000 کروڑ روپے کے آرڈر حاصل کیے ہیں ۔ سٹار نیو ز نیٹ ورک کے مطابق مرکزی وزیر امت شاہ نے پیر کو کہا کہ نئی قائم کردہ نیشنل کوآپریٹو فار ایکسپورٹ لمیٹڈ (این سی ای ایل) نے اب تک 7,000 کروڑ روپے کے آرڈر حاصل کیے ہیں ۔ امت شاہ جنہوں نے یہاں این سی ای ایل کے نئے لوگو اور ویب ساءٹ کا آغاز کیا، کہا کہ کوآپریٹو اس بات کو یقینی بنائے گا کہ برآمدات کے فوائد کوآپریٹیو کے ممبر کسانوں تک پہنچیں اور ان کے ساتھ برآمدی منافع کا تقریباً 50 فیصد حصہ کم از کم امدادی قیمت سے زیادہ اور اس سے زیادہ ہو ۔ فی الحال، NCEL ایک عارضی دفتر سے کام کر رہا ہے ۔ ہم عملہ بھرتی کر رہے ہیں ۔ اب تک، ہ میں (NCEL) کو 7,000 کروڑ روپے کے آرڈر ملے ہیں ۔ وزیر نے ایک قومی سمپوزیم سے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ NCEL نہ صرف برآمدات سے منافع کمانے پر توجہ مرکوز کرے گا بلکہ برآمدی منڈی کے لیے مصنوعات تیار کرنے کے لیے کسانوں کو بھی ہاتھ میں لے گا ۔ انہوں نے کہا کہ یہ کوآپریٹیو کے ممبر کسانوں کے ساتھ منافع کا اشتراک بھی کرے گا ۔ این سی ای ایل ایم ایس پی پر ممبر کسانوں سے برآمد کی جانے والی اشیاء خریدے گا ۔ NCEL کو برآمدات سے حاصل ہونے والے کل منافع میں سے، اس کا تقریباً 50 فیصد براہ راست ممبر کسانوں کے بینک کھاتوں میں منتقل کیا جائے گا ۔ انہوں نے کہا کہ منافع ایم ایس پی سے زیادہ ہوگا ۔ شاہ نے یہاں پوسا کمپلیکس میں منعقد ہونے والے سمپوزیم میں این سی ای ایل کے پانچ ارکان میں رکنیت کے سرٹیفکیٹ بھی تقسیم کئے ۔ اس موقع پر بات کرتے ہوئے، مرکزی وزیر تجارت پیوش گوئل نے کہا کہ این سی ای ایل کی تشکیل سے برآمدات کو تقویت ملے گی اور ملک کی ترقی اور دیہی تبدیلی میں مدد ملے گی ۔ انہوں نے کہا کہ کوآپریٹو سیکٹر برآمدی صلاحیت سے فائدہ اٹھا سکتا ہے کیونکہ عالمی سطح پر ہندوستان پر بڑھتا ہوا زور ہے ۔ وزیر نے یہ بھی کہا کہ کوآپریٹیو کو برآمدی منڈی کے لیے معیاری مصنوعات کی تیاری پر توجہ دینی چاہیے جو بین الاقوامی معیارات کے مطابق ہوں ۔ تعاون کے وزیر مملکت بی ایل ورما، تعاون کے سکریٹری گیانش کمار اور این سی ای ایل کے سربراہ پنکج کمار بنسل بھی اس تقریب میں موجود تھے ۔NCEL، جو اس سال 25 جنوری کو ملٹی سٹیٹ کوآپریٹو سوساءٹیز ایکٹ کے تحت رجسٹرڈ ہوا تھا، اس کے پاس 2,000 کروڑ روپے کا مجاز شیئر کیپٹل ہے اور وہ کوآپریٹو سوساءٹیاں جو پرائمری سے لے کر اعلیٰ سطح تک برآمدات میں دلچسپی رکھتی ہیں اس کے ممبر بننے کے اہل ہیں ۔ اس کا مقصد ملک کے جغرافیائی شکلوں سے باہر وسیع تر مارکیٹوں تک رسائی حاصل کرکے ہندوستانی کوآپریٹو سیکٹر میں دستیاب فاضل کو برآمد کرنے پر توجہ مرکوز کرنا ہے ۔ ملک میں تقریباً 8 لاکھ کوآپریٹو سوساءٹیز ہیں جن کی تعداد 29 کروڑ سے زیادہ ہے ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں