0

وادی کشمیر میں موسم سرماء کی تیاریاں شروع گرم ملبوسات اور الیکٹرانک آلات کی خریداری عروج پر

سرینگر;21اکتوبر;ایس این این;وادی کشمیر میں موسم سرماء کی آمد آمد کے پیش نظر وادی کشمیر میں لوگوں کی جانب سے تیاریاں شروع کردی گئیں اور بڑے پیمانے پرگرم ملبوسات کے ساتھ ساتھ الیکٹرانک آلات کی خریداری عروج پر ہے اورنئے نئے روم ہیٹر، گیس ہیٹر اور اے سی وغیرہ کی کا کاروبار بڑھ رہا ہے ۔ سٹار نیوز نیٹ ورک کے مطابق وادی کشمیر میں سردیاں شروع ہونے سے قبل ہی لوگوں نے سردیوں کےلئے بڑے پیمانے پرتیاریاں شروع کرتے ہوئے گرم ملبوستا اور دیگر الیکٹرانک آلات کی خریداری شروع کردی گئی ہے اس بیچ نئے نئے آلات جن میں روم ہیٹر ، گیس ہیٹر، وال ہیٹر وغیرہ کی خریداری بڑھ رہی ہے وہیں آج سرینگر میں الیکٹرانک آلات تیارکرنے والی کمپنی ہپی ہوم لانچ کی گئی جو روم ہیٹر ،اے سی وغیرہ فروخت کررہی ہے ۔ ا س ضمن میں ایک مقامی ہوٹل میں ایک تقریب کے دوران ہپی ہوم کولانچ کیا گیا اور اس موقعے پر کئی نامی گرامی شخصیات جن میں ڈسٹربیوٹر سحر الیکٹرانکس کے مبارک قادری ، چیرمین اکنامک الائنس فاروق احمد ڈار، ایس ایچ او مائسمہ ،کشمیر ٹریڈرس اینڈ مینوفیکررس فیڈریشن مائسمہ کے پریذیڈنٹ خالد مظفر ڈار ، جنرل سیکریٹری نثار شہدار ،وائس پریذیڈنٹ ارسلان جان ، کشمیر اکنامک الائنس کے دیگر سینئر ممبران کے علاوہ الائنس کے دیرینہ ممبر طارق احمد ڈار اور سید سجاد ،سپوکس پرسن شبیر احمد ڈار کے علاوہ صحافتی برادریسے وابستہ اور دیگر اہم شخصیات موجود تھیں ۔ اس موقعے پر انہوں نے بتایاکہ چونکہ وادی کشمیر میں سردیاں شدید نوعیت کی ہوتی ہے اور لوگوں کواضافی اخراجات برداشت کرنے پڑتے ہیں جس کو مد نظر رکھتے ہوئے ہپی ہوم نے لوگوں کوفائدہ پہنچانے کےلئے کئی نئے اقسام کے الیکٹرانک آلات جن میں روم ہوٹر وغیرہ بھی شامل ہیں متعارف کئے ہیں اور یہ مناسب قیمت پر بہتر پروڈیکٹ ہے ۔ انہوں نے بتایاکہ سردیوں میں اکثر لوگوں کو شکایت رہتی ہے کہ الیکٹرانک آلات یا رام ہیٹر اکثر خراب ہوجاتے ہیں لیکن ہپی ہوم ایک بہتر متبادل کے طور پر پیش کیاجارہا ہے جو نہ صرف پیسوں کی بچت ہے بلکہ یہ کم وولٹیج میں بھی عمدہ گرمی کا احساس دلائے گا ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں