0

وزیر داخلہ امیت شاہ نے دلی میں جموں کشمیر” بی جے پی” کے کور گروپ کی اعلیٰ سطحی میٹنگ کی صدارت کی

میٹنگ میں پارٹی کے کام کاج کے علاوہ ممکنہ بلدیاتی اور پنچایتی انتخابات سے قبل زمینی صورتحال کا جائزہ لیا گیا۔

کے این ایس۔۔۔۔مرکزی وزیر داخلہ امیت شاہ نے نئی دلی میں اپنی رہائش گاہ پر جموں و کشمیر” بی جے پی “کے کور گروپ کی ایک اعلیٰ سطحی میٹنگ کی صدارت کی جبکہ میٹنگ میں مرکز کے زیر انتظام علاقہ کی سیکورٹی صورتحال اور 2024 کے لوک سبھا انتخابات پر تبادلہ خیال کرنے کے ساتھ ساتھ پارٹی کے کام کاج کا جائزہ لینا مقصود تھا۔ ذرائع نے کشمیر نیوز سروس کو بتایا کہ یہ میٹنگ جو جلد بازی میں طلب گئی تھی کیونکہ جموں و کشمیر کی بی جے پی یونٹ کے لیڈروں کو گزشتہ رات دیر گئے میٹنگ میں بلایا گیا تھا تاکہ وہ پیرکو دلی پہنچ سکیں اور وزیر داخلہ کی سربراہی میں منعقدہ میٹنگ میں جموں کشمیر کی سکیورٹی صورتحال ،زمینی سطح پر پارٹی کے کام کاج سمیت دیگر کئی امور پر تبادلہ خیال کیا گیا۔ذرائع نے بتایا کہ میٹنگ میں بی جے پی کے قومی صدر جے پی نڈا، جموں و کشمیر کے انچارج ترون چُگ نے شرکت کی جبکہ میٹنگ میں جموں و کشمیر کے سابق نائب وزیر اعلیٰ کویندر گپتا، مرکزی وزیر اور ادھم پور کے ایم پی جتیندر سنگھ، اشوک کول، نرمل سنگھ، دیویندر منیال، جگل کشور شرما، ببدو گپتا، سنیل شرما، ست پال شرما اور شکتی پریہا نے بھی شرکت کی ۔ذرائع نے مزید بتایا کہ میٹنگ میں زمینی سطح پر پارٹی کی پوزیشن اور کام کاج کا جائزہ لیا گیا جبکہ میٹنگ میں خاص طور پر جموں و کشمیر میں آنے والے بلدیاتی اور پنچایتی انتخابات، جو ممکنہ طور پر اس سال منعقد ہونے جارہے ہیں کے علاوہ آئندہ ہونے والے قومی یعنی لوک سبھا انتخابات کے بارے میں بات چیت کی گئی۔ذرائع نے بتایا کہ اجلاس پہلے صبح 11 بجے ہونا تھا لیکن اسے سہ پہر 3 بجے تک ملتوی کر دیا گیا اور وزیر داخلہ امیت شاہ نے نئی دلی میں اپنی رہائش گاہ پر میٹنگ کی صدارت کی۔ذرائع نے مزید کہا کہ میٹنگ کے دوران مقامی سطح مسائل جو جموں و کشمیر میں بی جے پی کی شبیہ کو خراب کر رہے ہیں پر غور و خوض کیا گیا۔ذرائع نے بتایا کہ اجلاس میں جموں و کشمیر بی جے پی یونٹ کے کام کاج کا مجموعی جائزہ لیا گیا تاکہ آنے والے بلدیاتی اور پنچایتی انتخابات حکمت عملی طے کی جائے جو اس سال صرف مرکز کے زیر انتظام علاقے میں ہونے والے ہیں۔”قابل ذکر بات یہ ہے کہ رواں سال کے آخر میں جموں و کشمیر میں بلدیاتی اور پنچایتی انتخابات ہونے والے ہیں تاہم ابھی تک تاریخوں کے بارے میں کوئی وضاحت نہیں ہے کہ انتخابات کب ہوں گے تاہم قبل ازیں ہفتہ کو مرکزی وزیر اور ادھم پور سے ممبر پارلیمنٹ ڈاکٹر جتیندر سنگھ نے کہا تھا کہ بی جے پی جموں و کشمیر میں اسمبلی اور بلدیاتی انتخابات کے لئے تیار ہے لیکن اسکے لئے الیکشن کمیشن کو فیصلہ کرنا ہے

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں