0

وزیر داخلہ امیت شاہ کی سربراہی میں 26اکتوبر کو نئی دلی میں اعلیٰ سطحی اجلاس منعقد ہوگا

جموں کشمیر میں ترقیاتی کاموں اور سیکورٹی صورتحال کا تفصیلی طور پر جائزہ لیا جائے گا

وزارت داخلہ کے سینئر افسران کے ساتھ جموں و کشمیر کے سیول اور پولیس انتظامیہ کے اعلیٰ افسران شرکت کریں گے

سرینگر;15اکتوبر;ایس این این;جموں کشمیر میں ترقیاتی کاموں اور سیکورٹی صورتحال کا جائزہ لینے کیلئے وزیر داخلہ امیت شاہ سربراہی میں نئی دلی میں 26اکتوبر کو ایک اعلیٰ سطحی اجلاس منعقد ہونے والا ہے ۔ اس اجلاس میں وزارت داخلہ کے سینئر افسران کے ساتھ جموں و کشمیر کے سیول اور پولیس انتظامیہ کے اعلیٰ افسران شامل ہوں گے ۔ سٹار نیوز نیٹ ورک کے مطابق وزیر داخلہ امت شاہ 26 اکتوبر کو نئی دہلی میں جموں و کشمیر کے ترقیاتی کاموں اور سیکورٹی صورتحال کا اعلیٰ سطحی اجلاس میں جائزہ لیں گے ۔ اس اجلاس میں جموں کشمیر سے سول اور پولیس انتظامیہ کے اعلیٰ حکام اجلاس میں شرکت کریں گے ۔ حکام نے بتایا کہ مرکزی اسپانسرڈ اسکیموں ، وزیر اعظم کے ترقیاتی پیکیج کے تحت ترقیاتی کام، کشمیری مہاجر پنڈتوں کی بحالی کے منصوبے، یوٹی سیکٹر کے تحت جاری کام اور جموں و کشمیر میں سیکورٹی صورتحال کا جائزہ اجلاس میں آنے کی امید ہے ۔ میونسپلٹی اور پنچایتوں میں دیگر پسماندہ طبقات (او بی سی) کیلئے مجوزہ ریزرویشن، جس کیلئے ایک تجویز پہلے ہی پیش کی جا چکی ہے، بھی میٹنگ میں سامنے آسکتی ہے وزارت داخلہ کے سینئر افسران بشمول انچارج جموں و کشمیر، نیم فوجی اہلکار اور یوٹی کے سول اور پولیس انتظامیہ کے اعلیٰ افسران میٹنگ میں شامل ہوں گے ۔ یہ میٹنگ وزیر اعظم نریندر مودی، وزیر داخلہ امیت شاہ، وزیر دفاع راج ناتھ سنگھ اور وزیر روڈ ٹرانسپورٹ اور ہائی ویز نتن گڈکری کے نومبر سے جنوری تک جموں و کشمیر کے مجوزہ دوروں سے پہلے ہونی جا رہی ہے ۔ حکام نے بتایا کہ جموں و کشمیر کے اگلے مالی سال 2024-25 کیلئے کچھ بجٹ کی تجاویز پر بھی میٹنگ میں تبادلہ خیال ہونے کا امکان ہے ۔ انہوں نے کہا کہ میٹنگ میں جموں و کشمیر کی سیکورٹی صورتحال کا بھی اعلیٰ سطحی جائزہ لیا جائے گا، خاص طور پر سرحد پر دراندازی کی کوششوں کو روکنے کے ساتھ ساتھ اندرونی علاقوں میں عسکریت پسندی کے خلاف کارروائیوں کے لیے موسم سرما کی حکمت عملی کا بھی جائزہ لیا جائے گا ۔ عہدیداروں کے مطابق، بلدیات اور پنچایتوں میں او بی سی کو ریزرویشن دینے کی رسمی کارروائیوں کی تکمیل بھی میٹنگ میں ہوسکتی ہے ۔ جموں و کشمیر حکومت نے بلدیات اور پنچایتوں کے لیے انتخابی عمل کو روک دیا ہے تاکہ دونوں اداروں میں او بی سی کو ریزرویشن دیا جائے ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں