0

کشمیری دستکاری برآمدات میں نسبتاً 55فیصد اضافہ جی۔20سمٹ اور جی آئی ٹیگ نے بین الاقوامی مارکیٹ میں فائدہ دیا

سرینگر//25اکتوبر/ ٹی ای این / حال ہی میں منعقدہ جی سربراہی اجلاس کے بعد جیوگرافک انڈیکیشن (GI) ٹیگنگ نے کشمیر کے دستکاری کی برآمدات کو فروغ دینے میں اپنا اہم رول ادا کیا ہے۔اس سال کی پہلی سہ ماہی میں، جموں و کشمیر سے باقی دنیا کو 208.21 کروڑ روپے کی دستکاری برآمد کی گئی ہے۔مذکورہ رقم گزشتہ سال اپریل سے ستمبر کے دوران ریکارڈ کی گئی برآمدات کا 55 فیصد ہے۔سرکاری اعداد و شمار سے پتہ چلتا ہے کہ اپریل سے ستمبر 2022 کے دوران کشمیر سے 375.97 کروڑ روپے کے دستکاری برآمد کئے گئے ہیں، جو تقریباً دو چوتھائی بنتے ہیں۔قابل ذکر بات یہ ہے کہ پچھلے سال جموں و کشمیر سے دستکاری کی برآمدات1116.37 کروڑ کا نشان پار کرگئی۔رواں سال کی پہلی سہ ماہی کے دوران قالین کی برآمدات میں سب سے زیادہ اضافہ دیکھا گیا ہے۔ پہلی سہ ماہی میں 88.92 کروڑ روپے کے قالین برآمد کیے گئے۔پہلی سہ ماہی کے دوران کل 79.95 کروڑ روپے کی رومال اور شال برآمد کی گئیں۔اسی عرصے میں، چین سلائی کی برآمدات 32.85 کروڑ روپے درج ہوئیں۔ اس دوران 2.23 کروڑ روپے میں پیپر ماشی کی مصنوعات برآمد کی گئیں۔پہلی سہ ماہی کے دوران کل 2.54 کروڑ روپے کی لکڑی کے نقش و نگار اور دیگر اشیاء کی برآمدات ریکارڈ کی گئیں۔کشمیر نے حال ہی میں پشمینہ شالوں، قالینوں اور شاندار پیپر ماشی اشیاء سمیت اپنی مشہور دستکاری کے لیے جیوگرافیکل انڈکشن ٹیگنگ حاصل کی ہے۔GI ٹیگنگ ان مصنوعات کی صداقت اور اصلیت کو یقینی بناتی ہے، جو نقل اور جعل سازی سے تحفظ فراہم کرتی ہے جبکہ بین الاقوامی تجارت میں ان کی مارکیٹ اعتباریت کو بھی بڑھاتی ہے۔اس سال کے شروع میں مئی میں G20 سربراہی اجلاس کشمیر میں منعقد ہوا تھا جس کے دوران آنے والے مندوبین کو راغب کرنے کے لیے دستکاری کی بہت سی مصنوعات کی نمائش کی گئی تھی۔جب کہ مندوبین نے دستکاری کے پیچھے فن کو تسلیم کیا، ان میں سے بہت سے لوگوں نے سری نگر کے علاقوں کا دورہ کیا اور دستکاری کی اشیاء خریدیں۔ایک عہدیدار نے کہا کہ جی 20 میٹنگ اور جی آئی ٹیگنگ نے کشمیری دستکاری کی فروخت کو بڑھایا ہے۔اس سال کشمیری دستکاری کی اچھی مانگ رہی ہے۔ جی 20 سربراہی اجلاس نے ہمارے ہنر کو فروغ دیا کیونکہ کشمیری دستکاری کی مانگ یورپی ممالک سے زیادہ ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں