0

.کپواڑہ میں گزشتہ 8 ماہ میں لائن آف کنٹرول کے ساتھ دراندازی کی 8 کوششوں میں 27 ملی ٹنٹ مارے گئے

سرحد پار سے جموں و کشمیر میں امن کو خراب کرنے کی مسلسل کوشش کی جا رہی ہے/ جی او سی 28 انفنٹری ڈویژن
سرینگر/27اکتوبر/ایس این این// فوج نے دعویٰ کیا ہے کہ شمالی کشمیر کے ضلع کپواڑہ میں گزشتہ 8 ماہ میں لائن آف کنٹرول کے ساتھ دراندازی کی 8 کوششیں ہوئی جس کے نتیجے میں 27 ملی ٹنٹ مارے گئے۔ انہوں نے کہا کہ مارے گئے ملی ٹنٹ بھاری مقدار میں اسلحہ کے علاوہ منشیات بھی بر آمد کی گئی ہے۔ سٹار نیوز نیٹ ورک کے مطابق مژھل سیکٹر میں دراندازی کی کوشش کے دوران پانچ ملی ٹنٹوں کی ہلاکت کے بعد میڈیاسے بات کرتے ہوئے جنرل آفیسر کمانڈنگ 28 انفنٹری ڈویژن گریش کالیا نے بتایا کہ جمعرات کو مژھل سیکٹر میں دراندازی کی ایک بڑی کوشش کو ناکام بنائی گئی جس دوران بھاری ہتھیاروں سے لیس پانچ دراندازوں کو ہلاک کیا گیا۔ جی او سی نے کہا کہ سیکورٹی فورسز کی انتھک کوششوں کے ساتھ مل کر صورتحال میں کافی حد تک بہتری آئی ہے، جس نے ترقی اور سیاحت کی راہ ہموار کی ہے۔انہوں نے کہا کہ سرحد کے دوسری طرف سے جموں و کشمیر میں امن کو خراب کرنے کی مسلسل کوشش کی جا رہی ہے۔ سرحد کے دوسری طرف سے مسلسل دراندازی کی کوششیں ہو رہی ہیں۔ ایسی تمام کوششوں کو سیکورٹی فورسز نے ناکام بنا دیا ہے۔انہوں نے کہا کہ کپواڑہ میں گزشتہ 8 ماہ میں 10 کوششیں کی گئیں جس کے نتیجے میں 27 ملی ٹنٹوں کو ہلاک کیا گیا۔انہوں نے کہا ”مارے گئے دہشت گردوں سے بھاری مقدار میں جنگی سامان جیسے اسٹورز اور منشیات بھی برآمد کی گئی ہیں۔ وہ سبھی وادی میں امن کو خراب کرنے کے لیے پرعزم ہیں“۔کپوارہ کے سینئر سپرنٹنڈنٹ آف پولیس (ایس ایس پی) یوگل منہاس نے کہا کہ انٹیلی جنس گرڈ ہمیشہ تیار رہتا ہے۔ انہوں نے کہا ”ہمیں دراندازی کی کوشش کے بارے میں معتبر ذرائع سے معلومات ملی ہیں۔ ایک مخصوص تاریخ کے بارے میں متعلقہ یونٹ کے ساتھ معلومات کا تبادلہ کیا گیا تھا۔“

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں