0

2,000 کے ٪87 نوٹ بینک ڈپازٹ کے طور جمع

12,000 کروڑ کی کرنسی ابھی واپس آنی ہے;l: گورنر آر بی آئی شکتی داس

سرینگر;6اکتوبر; ٹی ای این ; ریزرو بینک آف انڈیاکے مطابق2000 روپے کے نوٹوں میں سے 87 فیصد واپس بنکوں میں جمع کے طور پر واپس آچکے ہیں جبکہ باقی کاونٹرز میں تبادلہ کیا گیا ہے ۔ ٹی ای این کے مطابق مانیٹری پالیسی کے جائزے کے اعلان کے بعد ایک پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے گورنر آر بی آئی نے کہا کہ 19 مئی 2023 تک زیر گردش 3;46;56 لاکھ کروڑ روپے کے 2000 کے نوٹوں میں سے 12,000 کروڑ واپس آنا باقی ہیں ۔ گزشتہ ہفتہ آر بی آئی نے کہا تھا کہ 29 ستمبر تک 3;46;42 لاکھ کروڑ نوٹ واپس مل چکے ہیں اور 14,000 کروڑ واپس آنا باقی ہیں ۔ مرکزی بینک نے بھی نوٹوں کی واپسی کی آخری تاریخ میں ایک ہفتے کی توسیع کی تھی ۔ داس نے کہا کہ آر بی آئی 4فیصد ہیڈ لائن افراط زر کے ہدف پرزور سے توجہ مرکوز کرنا چاہتا ہے، اور جب تک قیمتوں میں اضافے کی تعداد کم نہیں ہوتی، مانیٹری پالیسی فعال طور پر ڈس انفلیشنری رہے گی ۔ داس نے کہا کہ حکومت کے بینکر کے طور پر، آر بی آئی کو مرکزی حکومت کے مالیات پر کوئی فکر نہیں ہے ۔ ڈپٹی گورنر جے سوامی ناتھن نے کہا کہ 13 ۔ 14 فیصد کی مجموعی کریڈٹ نمو کے مقابلے میں 33 فیصد کی باہر قرض کی نمو نے آر بی آئی کو ذاتی قرضوں کے مسئلے کو جھنجھوڑ دیا اور بینکوں کو کسی بھی خطرے کی تعمیر سے بچنے کے لیے اقدامات کرنے کا اشارہ کیا ۔ داس نے فینانسرز سے کہا کہ جہاں بحران پیدا ہونے کا امکان ہے، وہ دیکھیں اور مناسب اقدامات کریں ۔ گورنر نے یہ بھی کہا کہ جون کی سہ ماہی میں مجموعی نان پرفارمنگ اثاثوں میں بہتری آئی ہے، اگر کوئی غیر آڈٹ شدہ نتاءج کو دیکھا جائے ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں