69

این آئی اے کی جانب سے منشیات سمگلروں کے خلاف سخت اقدام

دو بھائیوں کے گھر کو سیل کردیا ۔ منشیات سمگلروں سے بڑی مقدار میں حشیش ضبط ہوئی تھی
سرینگر05جولائی
منشیات کی سمگلنگ میں ملوث افراد کے خلاف این آئی اے کی جانب سے سخت کارروائی عمل میں لائی جارہی ہے جبکہ منشیات کی سمگلنگ میں ملوث دو بھائیوں کے گھر کو این آئی اے نے سیل کردیاہے ۔ سی این آئی کے مطابق نیشنل انویسٹی گیشن ایجنسی (این آئی اے) نے پنجاب کے امرتسر ضلع میں پاکستان کے زیر اہتمام منشیات دہشت گردی کے ایک کیس میں گرفتار دو بھائیوں کے گھر کو سیل کر لیا ہے، ایک اہلکار نے آج بتایاکہ قومی تحقیقاتی ایجنسی نے کہا کہ بکرمجیت سنگھ عرف وکی اور اس کے بھائی منیندر سنگھ عرف منی کی رہائشی جائیداد کو غیر قانونی سرگرمیاں (روک تھام) ایکٹ (یو اے پی اے) کے تحت ضبط کر لیا گیا ہے کیونکہ اسے
دہشت گردی کی آمدنی کے طور پر نامزد کیا گیا ہے۔عہدیدار نے کہا کہ دونوں بھائیوں کو پہلے ہی اس معاملے میں این آئی اے نے گرفتار کیا تھا۔این آئی اے نے پہلے ہی 13 ملزمان کے خلاف یو اے پی اے نارکوٹک ڈرگس اینڈ سائیکوٹروپک سبسٹنسز (این ڈی پی ایس) ایکٹ اور تعزیرات ہند (آئی پی سی) کے تحت چار چارج شیٹ (بشمول تین سپلیمنٹری) داخل کی ہیں جو ابتدائی طور پر اس کیس میں درج کی گئی تھیں۔ پنجاب پولیس نے 2020 میں اور 8 مئی 2020 کو ایجنسی کے ذریعے سنبھال لیا۔ترجمان نے کہا کہ یہ مقدمہ منشیات کی دہشت گردی کے ماڈیول کے ذریعے بڑی مقدار میں منشیات پاکستان سے بھارت میں سمگل کرنے کی سازش سے متعلق ہے۔منشیات سرحد پار سے درآمد شدہ راک سالٹ کی آڑ میں اسمگل کی جا رہی تھیں۔ اسمگل شدہ منشیات کی فروخت سے حاصل ہونے والی آمدنی پنجاب میں منقولہ اور غیر منقولہ جائیدادیں بنانے کے لیے استعمال کی جا رہی تھی، اس کے علاوہ کشمیر میں کالعدم حزب المجاہدین تنظیم کے دہشت گردوں کو فنڈز فراہم کرنے کے لیے استعمال کی جا رہی تھی۔این آئی اے نے اس سے قبل فوری کیس میں 7.5 ایکڑ اراضی، چھ گاڑیاں اور 6.35 لاکھ روپے ضبط کیے تھے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں